جاپانی وزیراعظم کا نو منتخب امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ پر اعتماد کا اظہار

ٹرمپ، شنزو ایبے تصویر کے کاپی رائٹ Reuters
Image caption نومنتخب امریکی صدر سے جاپانی وزیراعظم نے نیویارک میں نوے منٹ تک ملاقات کی

جاپان کے وزیراعظم شنزو ایبے نے کہا ہے کہ انھیں نو منتخب امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ پر 'بہت اعتماد' ہے اور وہ پراعتماد رشتہ بنا سکتے ہیں۔

جاپانی وزیراعظم نے ان خیالات کا اظہار نیویارک میں ٹرمپ ٹاور میں نومنتخب صدر کے ساتھ ملاقات کے بعد کیا۔

90 منٹ تک جاری رہنے والی اس ملاقات کے بارے میں ان کا کہنا تھا کہ ملاقات اچھی رہی اور گرمجوشی کا ماحول تھا۔

’امید ہے ٹرمپ روس کے خلاف ڈٹ جانے پر تیار ہوں گے‘

خیال رہے کہ ٹرمپ کی صدارتی مہم کے دوران تقاریر کے حوالے سے کچھ لوگوں کو جاپان کے ساتھ امریکہ کے دیرینہ تعلقات کے حوالے سے بھی خدشات تھے۔

صدارتی انتخاب جیتنے کے بعد ڈونلڈ ٹرمپ کی کسی عالمی سربراہ سے ہونے والی یہ پہلی مرتبہ ملاقات ہے۔

دوسری جنگِ عظیم کے بعد سے امریکہ اور جاپان اہم اتحادی رہے ہیں یہ وہ وقت تھا جب امریکہ نے جاپان کی معیشت کی بحالی کے لیے اس کی مدد کی۔

منتخب امریکی صدر نے بحرالکاہل میں تجارتی معاہدہ کرنے کی خواہش کا اظہار کیا ہے جس کی تائید جاپانی وزیراعظم نے بھی کی ہے۔ اس معاہدے کا مقصد چین کی بڑھتی ہوئی معاشی طاقت کا مقابلہ کرنا بھی ہے۔

ڈونلڈ ٹرمپ صدارت کا عہدہ سنبھالنے کے بعد یہ معاہدہ منسوخ ہونے کے امکان کے باوجود جاپانی پارلیمان نے اس معاہدے کی توثیق کی تھی۔

ڈونلڈ ٹرمپ نے یہ بھی کہا تھا کہ جاپان کو اپنی سرزمین پر موجود امریکی دستوں کے لیے مزید معاوضہ ادا کرنے کی ضرورت ہے۔

انھوں نے یہ خیال بھی پیش کیا تھا کہ شمالی کوریا کے میزائل پروگرام سے درپیش خطرات سے نمٹنے کے لیے جنوبی کوریا اور جاپان کو اپنے جوہری ہتھیار بنانے چاہیں۔

اطلاعات کے مطابق جاپانی وزیراعظم اور ڈونلڈ ٹرمپ کے درمیان ملاقات اس وقت طے پائی جب وزیراعظم شنزو ایبے نے ڈونلڈ ٹرمپ کو فون کیا اور صدارتی عہدہ جیتنے کے لیے مبارکباد دی اور بتایا کہ وہ براستہ نیویارک پیرو میں ایشیا پیسیفک کے تجارتی اجلاس میں شرکت کے لیے جائیں گے۔

ملاقات کے بعد شنزو ایبے نے کہا کہ 'ہمارے درمیان طویل وقت میں بہت اچھی بات چیت ہوئی۔ ملاقات بہت اچھے ماحول میں ہوئی۔'

انھوں نے مزید کہا کہ 'میں سمجھتا ہوں کہ دو قوموں کے درمیان بغیر اعتماد کے مستقبل میں شراکت داری عملی طور پر ممکن نہیں، اور آج کی ملاقات کے بعد میں پریقین ہوں کہ ڈونلڈ ٹرمپ وہ رہنما ہیں جن پر مجھے بہت اعتماد ہے۔'

جاپانی وزیراعظم نے یہ بھی بتایا کہ دونوں رہنماؤں نے تفصیلی ملاقات کے لیے پھر ملنے کا ارادہ کیا ہے۔

یاد رہے کہ ڈونلڈ ٹرمپ نے امریکی صدارتی انتخاب میں غیر معمولی طور پر کامیابی حاصل کی ہے اور اب وہ دنیا کے رہنماؤں سے بات چیت کر رہے ہیں اور وہ اپنی کابینہ کے اراکین بھی منتخب کر رہے ہیں۔

میڈیا رپورٹس کے مطابق لیفٹیننٹ جنرل (ر) مائکل فلائن کو نیشنل سکیورٹی ایڈوائزر کے عہدے کی پیشکش ہوئی ہے۔

اطلاعات کے مطابق جمعرات کو ڈونلڈ ٹرمپ سے ملنے والوں میں جنوبی کیرولینا کی گورنر نیکی ہیلے بھی شامل تھیں جو امریکی سٹیٹ ڈیپارٹمنٹ کی سربراہی کے لیے اہم امیدوار ہیں۔

امریکی میڈیا کے مطابق سابق صدارتی امیدوار مٹ رومنی اور ڈونلڈ ٹرمپ آئندہ دو روز میں ملاقات کریں گے۔

ڈونلڈ ٹرمپ نے جن ریاستوں میں کامیابی حاصل کی وہ وہاں اب 'وکٹری ٹور' کریں گے۔

متعلقہ عنوانات

اسی بارے میں