جاپان میں سونامی کی وارننگ واپس

جاپان زلزلہ تصویر کے کاپی رائٹ Getty Images

جاپان میں 7.4 شدت کے زلزلے کے بعد حکام نے سونامی کی جاری کی گئی وراننگ واپس لے لی جبکہ زلزلے کے نتیجے میں متعدد افراد کے زخمی ہونے کی اطلاع ہے۔

جاپان کے محکمہ موسمیات کا کہنا ہے کہ مقامی وقت کے مطابق منگل کی صبح چھ بجے جاپان کے مشرقی ساحل پر سات اعشاریہ چار کی شدت سے زلزلہ آیا۔ زلزلے کا مرکز فوکوشیما کے ساحل کا قریبی علاقہ بتایا گیا ہے۔

زلزلے کی گہرائی کا اندازہ 25 کلومیٹر لگایا گیا ہے۔

حکام نے زلزلے کے بعد سونامی کی واننگ جاری کرتے ہوئے کہا تھا کہ 3 میٹر بلند سمندری لہریں ساحل سے ٹکرا سکتی ہیں تاہم بعد میں ان کی شدت کم ہونے کے بعد وارننگ واپس لے لی گئی۔

حکام نے وارننگ جاری کرتے ہوئے ہزاروں افراد کو علاقے سے نکل جانے کا حکم دیا تھا جبکہ زلزلے کے نتیجے میں متعدد افراد کے معمولی زخمی ہونے کی اطلاعات بھی موصول ہوئی ہیں۔

دوسری جانب ٹوکیو الیکٹرک پاور زلزلے کے نتیجے میں فوکو شیما کے جوہری پلانٹ میں ہونے والے ممکنہ نقصان کا جائزہ لے رہے ہیں۔

کابینہ کے چیف سیکرٹری سوگا نے ٹی وی پر نیوز کانفرنس کے دوران بتایا کہ'پلانٹ کے واٹر کولنگ سسٹم نے کام کرنا چھوڑ دیا ہے لیکن درجہ حرارت بڑھنے یا کسی اور خرابی کے بارے میں کوئی اطلاع نہیں ملی'

بعد ازاں پلانٹ کے نگران نے بتایا کہ انھوں نے کولنگ سسٹم کو دوبارہ سے سٹارٹ کر دیا ہے۔

یاد رہے کہ سن 2011 کے زلزلے کے بعد فوکوشیما کے تمام جوہری پلانٹ بند کر دیے گئے تھے تاہم اب بھی وہاں موجود جوہری ایندھن کے لیے کولنگ سسٹم کی ضرورت ہوتی ہے۔

تصویر کے کاپی رائٹ Reuters
Image caption حکام کی جانب سے مکینوں کو محفوظ مقامات پر منتقل ہونے کی ہدایت کے بعد شاہراؤں پر صبح سویرے ٹریفک جام کے مناظر دیکھے جا رہے ہیں

منگل کو آنے والے زلزلے کے نتیجے میں فوری طور پر کسی جانی یا مالی نقصان کی اطلاع موصول نہیں ہوئی تاہم زلزلے کے جھٹکے ٹوکیو میں بھی محسوس کیے گئے۔

ابتدا میں امریکی جیولوجیکل سروے نے زلزلے کی شدت سات اعشاریہ تین بتائی تھی تاہم بعد میں بتایا گیا کہ زلزلے کی شدت چھ اعشاریہ نو ہے۔

دنیا بھر میں آنے والے 20 فیصد زلزلے جاپان میں آتے ہیں جن کی شدت چھ اعشاریہ صفر یا اس سے زیادہ ہوتی ہے۔

تصویر کے کاپی رائٹ Reuters
Image caption سونامی کی وارننگ فوکوشیما میں موجود جوہری پلانٹ کے علاقے کے لیے بھی جاری کی گئی ہے

رواں برس اپریل میں جنوبی کوماموٹو میں آنے والے زلزلے میں 50 افراد ہلاک ہو گئے تھے۔

خیال رہے کہ جاپان میں پانچ سال قبل آنے والے تباہ کن زلزلے اور سونامی میں تقریباً 18,000 افراد ہلاک ہوئے تھے یا پھر اب تک لاپتہ ہیں۔

ساحل سمندر پر9.0 کی شدت کے زلزلے کے نتیجے میں سمندری طوفان برپا ہوا تھا جس سے شمال مشرقی جاپان میں شدید جانی و مالی تباہی ہوئی تھی۔

سونامی سے فوکوشیما میں واقع ڈائچی جوہری پلانٹ بھی بری طرح سے متاثر ہوا تھا جسے سنہ 1984 میں چرنوبل کے بعد بڑا جوہری تباہی کا واقعہ سمجھا جاتا ہے۔

اسی بارے میں