میلانیا ٹرمپ کی نقل اتارنے پر جیجی کی معذرت

جیجی حدید تصویر کے کاپی رائٹ unknown
Image caption ’خود میرا کئی مرتبہ مذاق اڑایا جا چکا ہے اور مجھے اسے دیکھ کر مزا آیا‘

مشہور امریکی ماڈل جیجی حدید نے امریکی میوزک ایوارڈز کی تقریب کے دوران منتخب صدر ڈونلڈ ٹرمپ کی اہلیہ میلانیا ٹرمپ کی نقل اتارنے پر معذرت کر لی ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ ’ اگر میں نے کسی کا دل دکھایا ہے تو میں معافی چاہتی ہوں اور اپنے ملک کے لیے بہترین خواہشات کا اظہار کرتی ہوں۔‘

اس نقل کے لیے انھوں نے جو فقرے استعمال کیے وہ دراصل امریکہ کی موجودہ خاتون مشیل اوباما کے تھے۔

ٹوئٹر پر ایک بیان میں جیلینا نورا حدید نے لکھا کہ ’ میرا خیال ہے کہ میں نے اس تقریر سے تمام ایسے الفاظ یا تو نکال دیے تھے یا تبدیل کر دیے تھے جن کی وجہ سے بات مذاق کے دائرے سے باہر جا سکتی تھی۔ یہ آپ کی مرضی ہے کہ آپ اسے کس نظر سے دیکھنا چاہتے ہیں، لیکن میں نے جو کچھ کہا وہ محض مذاق تھا اور میری نیت بالکل خراب نہیں تھی۔‘

’ ماضی میں قومی ٹی وی چینلوں پر خود میرا کئی مرتبہ مذاق اڑایا جا چکا ہے اور مجھے اسے دیکھ کر مزا آیا۔‘

ان کا مزید کہنا تھا کہ ’مجھے یقین ہے کہ میلانیا شو بزنس کی دنیا کو سمجھتی ہیں اور انھیں پتہ ہے کہ اس قسم کی تقریبات میں کس قسم کے سکرپٹ لکھے اور دکھائے جاتے ہیں۔‘

امریکی میوزک ایوارڈز کی تقریب میں ساتھی میزبان کے فرائض سر انجام دینے والے سیاہ فام جے فیرو نے ’انسٹا گرام‘ پر جیجی کی حمایت میں بیان دیا ہے اور لوگوں سے درخواست کی ہے کہ وہ ’ جیجی کو اکیلا چھوڑ دیں‘۔

انھوں نے لکھا براہ مہربانی ’تمام لوگ ایک منٹ کے لیے بریک لگا دیں۔‘

انھوں نے لکھا کہ ’گذشتہ آٹھ سالوں میں خوبصورت مشیل اوباما کو کئی بار رکیک جملوں کا نشانہ بنایا گیا۔

جہاں تک فن کی دنیا کے دیگر افراد کا تعلق ہے تو ملینیا کی نقل اتارنے پر ان کا رد عمل ملا جلا رہا ہے۔