اوکلینڈ کے کلب میں آتشزدگی سے درجنوں افراد کی ہلاکت کا خدشہ

تصویر کے کاپی رائٹ Getty Images

امریکہ کی ریاست کیلفورنیا کے علاقے اوکلینڈ میں ایک کنسرٹ کے دوران آتشزدگی کے واقعے میں درجنوں افراد کے ہلاک ہونے کا خدشہ ہے۔

حکام نے اب تک نو افراد کی ہلاکت کی تصدیق کی ہے لیکن اُن کا کہنا ہے کہ اس واقعے میں ہلاک ہونے والے افراد کی تعداد 40 تک ہو سکتی ہے۔

اوکلینڈ کے فائر چیف کے مطابق تقریباً 50 سے 100 افراد ابھی اندر موجود ہیں۔

پولیس کا کہنا ہے کہ آگ مقامی وقت کے مطابق رات ساڑھے گیارہ بجے لگی۔

اس کلب میں ایک کنسرٹ ہو رہا تھا جس میں چھ فنکار پرفارم کر رہے تھے اور کنسرٹ کا اعلان فیس بک پر ایک روز قبل کیا گیا تھا۔

تصویر کے کاپی رائٹ Reuters

سوشل میڈیا پر جاری کی گئی ویڈیوز میں آگ کے شعلے بلند ہوتے ہوئے دیکھے جا سکتے ہیں۔

آگ بجھانے والے عملے کا کہنا ہے کہ اس عمارت میں آگ بجھانے کا خود کار نظام نہیں تھا اور نہ ہی انھوں نے کسی قسم کی فائر الارم کی آواز سنی۔

ایک گودام میں جہاں یہ نائٹ کنسرٹ ہو رہا تھا وہاں وقتی طور پر سٹوڈیو بنایا گیا تھا اور وہاں فرنیچر سمیت دیگر اشیا موجود ہیں جس سے آگ بجھانے میں مشکلات ہو رہی ہیں۔

اوکلینڈ کے فائر چیف کا کہنا ہے کہ 'گودام سے نکلنے کا واحد راستہ دوسری منزل پر ہے جہاں لکڑی کے تختوں کی سیڑھی بنی ہوئی ہے۔'

خصوصی ریسکیو ٹیمیں موقع پر پہنچ گئی ہیں اور بلڈنگ کی بجلی بند کر دی گئی۔

تصویر کے کاپی رائٹ Reuters

بلڈنگ میں رہائش پذیر ایک آرٹسٹ نے مقامی روزنامے کو بتایا کہ اُس نے آگ میں پھنسے اپنے دوست کو بچانے کی کوشش کی لیکن کامیاب نہیں ہو سکا۔

انھوں نے بتایا کہ 'مجھے ایسا لگ رہا تھا کہ میری جلد اتر رہی ہیں اور میرے پھیپھڑے دھوئیں سے بھر گئے تھے۔'

سنہ 1989 کے بعد یہ اوکلینڈ میں سب سے زیادہ مہلک آتشزدگی کا واقع ہے۔

اسی بارے میں