اوکلینڈ: کلب میں آتشزدگی کے حادثے میں 30 افراد کی ہلاکتوں کی تصدیق

تصویر کے کاپی رائٹ Reuters

امریکی ریاست کیلفورنیا کے شہر اوکلینڈ میں ایک کنسرٹ کے دوران بلڈنگ میں آتشزدگی کے واقعے میں کم سے کم 30 افراد ہلاک ہوئے ہیں۔

حکام کا کہنا ہے کہ گودام میں جہاں یہ کنسرٹ ہو رہا تھا وہاں آگ لگنے بجھانے کے بعد تقریباً 20 فیصد عمارت میں تلاشی مکمل ہو گئی ہے لیکن ابھی تک کئی افراد لاپتہ ہیں۔

ابھی تک گودام میں آگ لگنے کی وجہ معلوم نہیں ہو سکی۔ حکام عمارت کی سیفٹی کے ریکارڈ کی چھان بین کر رہے ہیں۔

پولیس کا کہنا ہے کہ آگ مقامی وقت کے جمعے کو رات ساڑھے گیارہ بجے لگی۔

اوکلینڈ کی فائر چیف آفیسر کے کے مطابق آتشزدگی کے وقت تقریباً 50 سے 100 افراد اندر موجود تھے۔

گودام میں جہاں یہ نائٹ کنسرٹ ہو رہا تھا وہاں وقتی طور پر سٹوڈیو بنایا گیا تھا کنسرٹ میں چھ فنکار پرفارم کر رہے تھے اور کنسرٹ کا اعلان فیس بک پر ایک روز قبل کیا گیا تھا۔

عمارت میں آگ بجھانے کا خود کار نظام بھی موجود نہیں تھا اور باہر نکلنے کا واحد راستہ دوسری منزل پر سڑھیاں تھیں جو لکڑی کے تحتوں کی بنی ہوئی تھیں۔

تصویر کے کاپی رائٹ Reuters

آگ کی وجہ سے لاشوں کی شناخت بھی نہیں ہو پا رہی ہے اور اب تک صرف تین لاشوں کی شناخت ممکن ہو سکی ہے۔

آگ بجھانے کا عملہ ساری رات آگ پر قابو پانے کو کوشش کرتا رہا۔ عمارت میں آگ بجھانے کے بعد سرچ آپریشن اگلے 48 گھنٹوں تک جاری رہے گا۔

اوکلینڈ کے محکمۂ فایئر کی سبربراہ کا کہنا ہے کہ 'یہ بہت دل سوز واقع ہے، سرچ آپریشن طویل اور کٹھن مرحلہ ہے۔ ہمارے خیال میں جہاں آگ لگی تھی ہم اُس کے قریب تر بھی نہیں پہنچ سکے ہیں۔'

حکام کا کہنا ہے کہ آگ کے بعد سب سے زیادہ اہم کام بلڈنگ کو محفوظ بنانا ہے تاکہ سرچ میں مصروف ٹیمیں اور تفتیش کار اند پہنچ سکیں۔

اسی بارے میں