نشے میں دھت پائلٹ کاک پِٹ سے گرفتار

تصویر کے کاپی رائٹ Getty Images
Image caption کپتان کی گرفتاری کا واقعہ کیلگری کے مقامی وقت کے مطابق سنیچر کی صبح سات بجے پیش آیا۔

کینیڈا میں ایک پائلٹ کو طیارہ اڑانے سے تھوڑی دیر پہلے ان کی نشست سے گرفتار کر لیا گیا کیونکہ وہ شراب کے نشے میں تھے۔

انھوں نے اتنی زیادہ شراب پی رکھی تھی کہ گرفتاری کے تین گھنٹے بعد بھی جب ان کا طبی معائنہ کیا گیا تو ان کے جسم میں شراب کا تناسب قانونی طور پر مقرر حد سے تین گنا زیادہ پایا گیا۔

کینیڈا کے شہر کیلگری سے میسکسیکو جانے والی سستی ہوائی کمپنی ’سن وِنگ‘ کی مذکورہ پرواز کو بعد میں ایک دوسرے کپتان کے حوالے کر دیا گیا۔ پرواز پر ایک سو سے زیادہ مسافر سوار تھے۔

کپتان کی گرفتاری کا واقعہ کیلگری کے مقامی وقت کے مطابق سنیچر کی صبح سات بجے پیش آیا۔

تفصیلات کے مطابق ایئر لائن کے دیگر عملے نے دیکھا کہ مذکورہ پائلٹ کچھ عجیب و غریب حرکتیں کر رہے تھے اور تھوڑی دیر بعد کاک پِٹ میں بے ہوش ہو گئے۔ عملے نے ایئر پورٹ حکام کو اس کے بارے میں بتایا جو پائلٹ کو طیارے سے اتار کر اپنے ساتھ لے گئے۔۔

پولیس کے مطابق پائلٹ پر مقدمہ چلایا جائے گا کہ ایک طیارے کی ذمہ داری ہاتھ میں ہوتے ہوئے انھوں نے اپنی یہ حالت کیوں کی۔

صحافیوں سے بات کرتے ہوئے کیلگری پولیس کے ترجمان پال سٹیسی کا کہنا تھا کہ ’آپ لوگ پائلٹ کا نشہ تھوڑا اترنے کا انتظار کریں جس کے بعد انھیں جج کے سامنے پیش کیا جائے گا۔‘

’اس میں کوئی شک نہیں کہ پائلٹ کی یہ حالت کسی بہت بڑے حادثے کا باعث بن سکتی تھی، لیکن میں اتنا ضرور کہوں گا کہ اس بات کے امکانات بہت کم ہوتے ہیں کہ کسی بھی بڑی ہوائی کپمنی کا کوئی پائلٹ ایسی حالت میں طیارہ اڑا کر لے جائے کیونکہ طیارہ اڑانے سے پہلے پائلٹ کی بہت جانچ پڑتال ہوتی ہے۔‘

’وہاں پر پائلٹ کے علاوہ طیارے کا دوسرا عملہ اور جہاز کی جانب جانے والے دروازے پر بھی عملے کے افراد موجود ہوتے ہیں جن تمام کا مقصد مسافروں کی حفاظت ہوتا ہے۔ اسی لیے مجھے یہ جان کر کوئی حیرت نہیں ہوئی کہ طیارے کے اپنی جگہ سے ہلنے سے پہلے ہی ہمیں معلوم ہو گیا کہ کچھ گڑ بڑ ہے۔‘

مسٹر سٹیسی کا مذید کہنا تھا کہ مذکورہ کپتان کو مستقبل قریب میں طیارہ اڑانے کی اجازت نہیں ملے گی۔