’ٹرمپ کی پالیسیوں پر اعتماد‘، فورڈ موٹرز کا میکسیکو میں پلانٹ کا منصوبہ منسوخ

گاڑی تصویر کے کاپی رائٹ Getty Images
Image caption فورڈ موٹرز کے مارک فیلڈز نے بتایا کہ ڈونلڈ ٹرمپ کے صدر بننے کے بعد اُن کو امید ہے کہ امریکہ میں کاروباری ماحول میں بہتری آئے گی

گاڑیاں بنانے والی مشہور کمپنی فورڈ نے اعلان کیا ہے کہ وہ 1.6 ارب ڈالرز کی مالیت سے میکسیکو میں پلانٹ کی تعمیر کا منصوبہ منسوخ کر کے امریکی ریاست مشی گن میں ہی اپنے پلانٹ کو وسیع کریں گے۔

فلیٹ روک کے علاقے میں موجود پلانٹ کی توسیع کے لیے کمپنی 70 کروڑ ڈالر خرچ کرے گی۔

فورڈ کے منتظم مارک فیلڈز نے کہا یہ فیصلہ لینے کی ایک وجہ یہ ہے کہ شمالی امریکہ میں چھوٹی گاڑیوں کی فروخت میں کمی آئی ہے اور دوسرا یہ کہ کمپنی کو نو منتخب امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کی پالیسیوں پر اعتماد ہے۔

فورڈ موٹرز کے مارک فیلڈز نے بی بی سی کو بتایا کہ ڈونلڈ ٹرمپ کے صدر بننے کے بعد اُن کو امید ہے کہ امریکہ میں کاروباری ماحول میں بہتری آئے گی۔

تصویر کے کاپی رائٹ AFP
Image caption ڈونلڈ ٹرمپ نے فورڈ موٹرز اور جنرل موٹرز کو میکسیکو میں گاڑیاں بنانے پر تنقید کا نشانہ بنا چکے ہیں

فورڈ کمپنی مکمل طور پر میکسیکو سے اپنا کاروبار ختم نہیں کر رہی لیکن اپنے فوکس ماڈل کی گاڑیوں کے پلانٹ کو منافع کی بہتری کی خاطر وہاں سے ختم کر رہی ہے۔

یاد رہے کہ ڈونلڈ ٹرمپ نے فورڈ موٹرز اور جنرل موٹرز کو میکسیکو میں گاڑیاں بنانے پر تنقید کا نشانہ بنا چکے ہیں۔

میکسیکو کے وزیرِ معشیت نے فورڈ کمپنی کے فیصلے پر افسوس کا اظہار کیا اور امید ظاہر کی کہ کمپنی ریاست سان لویئس پوٹوسی، جہاں پلانٹ کی تعمیر ہونی تھی، کو منسوخی کا معاوضہ اتا کرے گی۔

اسی بارے میں