سعودی عرب: ’دہشت گردی کے الزام میں 13 پاکستانیوں سمیت 16 گرفتار‘

اسلحہ تصویر کے کاپی رائٹ @MOISaudiArabia
Image caption سکیورٹی آپریشن کے دوران مشتبہ شدت پسندوں کے ٹھکانوں سے برآمد کیے جانے والے گرنیڈز، دھماکہ خیر مواد اور اسلحے کی تصاویر بھی جاری کی ہیں

سعودی عرب کی وزارت داخلہ کا کہنا ہے کہ دہشت گردی میں ملوث 13 پاکستانی شہریوں سمیت 16 افراد کو گرفتار کیا گیا ہے۔

منگل کو سعودی وزارت داخلہ نے ٹوئٹر پر تفصیلات جاری کرتے ہوئے بتایا کہ 16 افراد کو دہشت گردی میں ملوث ہونے کے الزام میں گرفتار میں کیا گیا جن میں تین سعودی شہری ہیں جبکہ باقی تمام کا تعلق پاکستان سے ہے۔

تاہم گرفتار کیے گئے مبینہ پاکستانی شہریوں کی شناخت ظاہر نہیں کی گئی اور نہ ہی اس حوالے سے تفصیلات سے آگاہ کیا گیا ہے۔

سعودی وزارت خارجہ کے مطابق یہ گرفتاریاں سکیورٹی آپریشن کے دوران عمل میں آئی ہیں۔

خیال رہے کہ سنیچر کو جدہ میں سکیورٹی فورسز اور مشتبہ حملہ آوروں کے درمیان فائرنگ میں دو مبینہ شدت پسندوں نے خود کو دھماکے سے اڑا لیا تھا۔

یہ واقعہ سنیچر کی صبح جدہ کے الحرازت کے علاقے میں اس وقت پیش آیا تھا جب سکیورٹی فورسز اور ایک مکان میں چھپے ہوئے مبینہ دہشتگردوں کے درمیان فائنرگ کا تبادلہ ہوا۔

تصویر کے کاپی رائٹ @MOISaudiArabia

وزارت خارجہ کے مطابق فورنزک ٹیسٹ کے بعد ہلاک ہونے والے دونوں دہشت گردوں کی شناخت سعودی شہری غازی حسین السروانی اور ندی مرزوق المضیانی کے نام سے ہوئی ہے اور وہ سکیورٹی فورسز کو مطلوب تھے۔

وزارت خارجہ نے سکیورٹی آپریشن کے دوران مشتبہ شدت پسندوں کے ٹھکانوں سے برآمد کیے جانے والے گرنیڈز، دھماکہ خیر مواد اور اسلحے کی تصاویر بھی جاری کی ہیں۔

متعلقہ عنوانات

اسی بارے میں