کویت میں حکمراں شاہی خاندان کے شہزادے سمیت سات مجرمان کو پھانسی

کویت پولیس تصویر کے کاپی رائٹ Getty Images

کویت میں سال 2013 کے بعد پہلی بار حکمراں شاہی خاندان کے ایک شہزادے سمیت سات مجرمان کو پھانسی دی گئی ہے۔

کویت کی سرکاری خبر رساں ایجنسی کونا کے مطابق مجرمان کو سینٹرل جیل میں پھانسی دی گئی۔

شاہی خاندان کے شہزادے کا نام فیصل عبداللہ الجبار ال صبا ہے اور انھیں قتل اور غیر قانونی اسلحہ رکھنے کے جرم میں پھانسی کی سزا سنائی گئی تھی۔

شہزادے فیصل نے سال 2010 میں ایک اور شہزادے کو قتل کر دیا تھا۔

دیگر مجرمان کا تعلق فلپائن، مصر، ایتھوپیا اور بنگلہ دیش سے تھا اور انھیں قتل، اقدام قتل، اغوا اور ریپ کے جرم میں پھانسی کی سزا سنائی گئی تھی۔

پھانسی پانے والوں میں ایک کویت کی ہی ایک خاتون نصرا ال اینزی بھی شامل ہے جن پر شادی کی ایک تقریب کے دوران خیمے کو آگ لگانے کے جرم میں سزا سنائی گئی تھی۔

ان کے شوہر کی دوسری شادی کی تقریب میں آتشزدگی کے اس واقعے میں پچاس سے زائد افراد ہلاک ہو گئے تھے۔

اس کے علاوہ فلپائن اور ایتھوپیا سے تعلق والے مجرمان گھریلو ملازمین تھے اور انھیں ملازمت پر رکھنے والوں کے خاندان کے افراد کو قتل کرنے کے جرم میں پھانسی کی سزا سنائی گئی تھی۔

بی بی سی عرب افیئرز کے مدیر سبیسٹیئن اوشر نے شہزادے کی پھانسی کو خیلیجی ممالک میں ایک غیر معمولی اقدام قرار دیتے ہوئے کہا ہے کہ اس کا مقصد یہ ثبوت دینا ہے کہ قانون سے بلاتر کوئی نہیں۔

اسی بارے میں