ٹرمپ کی ٹیم کے لیے ووٹنگ: ڈیموکریٹس کا بائیکاٹ

تصویر کے کاپی رائٹ Getty Images and Reuters
Image caption ڈیموکریٹ اراکین کا کہنا ہے کہ وہ محکمہ صحت کے لیے ٹوم پرائس اور خزانہ کے لیے سٹیفن منوچن کے مالیاتی امور کے بارے میں مزید تفصیلات جاننا چاہتے ہیں

امریکی سینیٹ کی فنانس کمیٹی میں ڈیموکریٹ امیدوار صدر ڈونلڈ ٹرمپ کی جانب سے نامزد کیے جانے والے کابینہ کے دو اراکین کو ووٹ کا بائیکاٹ کر رہے ہیں اور اس بات پر زور دے رہے ہیں کہ اس عمل کو معطل کر دیا جائے۔

ان اراکین کا کہنا ہے کہ وہ محکمہ صحت کے لیے ٹوم پرائس اور خزانہ کے لیے سٹیفن منوچن دونوں نامزد افراد کے مالیاتی امور کے بارے میں مزید تفصیلات جاننا چاہتے ہیں۔

٭ ٹرمپ نے حکم عدولی پر اٹارنی جنرل کو برطرف کر دیا

٭ٹرمپ کی کابینہ کی پہلی خواتین اراکین نامزد

ادھر اٹارنی جنرل کے عہدے کے لیے نامزد جیف سیشنز کے لیے کی جانے والی ووٹنگ بھی معطل کر دی گئی ہے۔

یاد رہے کہ منگل کو قائمقام اٹارنی جنرل کو صدر ٹرمپ نے اس لیے ان کے عہدے سے ہٹا دیا تھا کیونکہ انھوں نے امیگریشن سے منتعلق حکم نامے کی قانونی حیثیت پر سوال اٹھایا تھا۔

فنانس کمیٹی میں شامل ڈیموکریٹ اراکین نے میڈیا کے نمائیندوں سے گفتگو میں بتایا کہ وہ نامزد امیدواروں کے بارے میں مزید جاننا چاہتے ہیں۔

جارجیا سے تعلق رکھنے والے ٹوم پرائس کا کو صحت اور عوامی سروسز کا سیکریٹری نامزد کیا گیا ہے۔

ان کا کہنا ہے کہ وہ مسٹر سٹیفن کے حوالے سے بھی تحفظات کا شکار ہیں جس کی وجہ ان کےبارے میں موصول ہونے والی رپورٹس ہیں جن میں کہا گیا ہے کہ وہ بینک ون ویسٹ کی بندش میں ملوث تھے۔

اسی بارے میں