آسٹریلیا: طیارہ حادثے میں پانچ افراد ہلاک

میلبرن تصویر کے کاپی رائٹ Getty Images

آسٹریلیا کے شہر میلبرن میں ایک طیارہ حادثے کا شکار ہوکر شاپنگ سینٹر پر جا گرا جس کے نتیجے میں پانچ افراد ہلاک ہو گئے ہیں۔

وکٹوریہ پولیس کے نائب کمشنر سٹیفن لین نے بتایا کہ اس چارٹر طیارے میں چھوٹے ایئرپورٹ ایسنڈون سے اڑنے کے فورا بعد بظاہر 'تباہ کن خرابی پیدا ہو گئی۔'

یہ طیارہ مقامی وقت کے مطابق منگل کو صبح نو بجے حادثے کا شکار ہوا

طیارے میں سوار تمام افراد کی ہلاکت کا خدشہ ظاہر کیا جا رہا ہے۔

نائب کمشنر نے کہا: 'ابھی صرف اتنی اطلاعات ہیں کہ جہاز میں سوار افراد کے علاوہ کوئي اور ہلاک نہیں ہوا ہے۔

تصویر کے کاپی رائٹ Reuters
Image caption پولیس نے اس علاقے کو اپنے حصار میں لے لیا ہے

'آگ کے شعلوں کو دیکھتے ہوئے اتنا کہہ سکتے ہیں کہ خوش قسمتی سے شاپنگ سینٹر کے اس حصے یا سٹور کی کار پارکنگ میں اس وقت کوئی نہیں تھا اور کسی کو نقصان نہیں پہنچا۔'

یہ شاپنگ سینٹر اس وقت عوام کے لیے کھلا نہیں تھا۔

ایک عینی شاہد میکی کاہل نے ہیرالڈ سن کو بتایا: 'مجھے فوراً ہی اندازہ ہو گيا کہ یہ کوئی خطرناک حادثہ ہے۔‘

تصویر کے کاپی رائٹ Reuters
Image caption وہاں رکھی کئی موٹر گاڑیاں آگ کی زد میں آ گئیں

ایک دوسرے عینی شاہد ڈینیئل مے نے کہا کہ یہ حادثہ اس وقت ہوا جب وہ شاپنگ سینٹر کے کھلنے کا انتظار کر رہے تھے۔

وکٹوریہ کے پریمیئر ڈینیئل اینڈریو نے کہا: 'آج کا دن بہت ہی اداس کرنے والا ہے اس لیے کہ آج کئی افراد کی موت ہو گئی اور یہ گذشتہ 30 برسوں میں ہماری شہری ہوابازی میں ہونے والا بدترین واقعہ ہے۔'

تصویر کے کاپی رائٹ AFP
Image caption آگ بجھانے والے عملے نے فورا کاروائی کرتے ہوئے آگ پر قابو پا لیا

خیال رہے کہ ایسنڈون ایئرپورٹ زیادہ تر چھوٹے طیاروں کے لیے استعمال ہوتا ہے اور یہ سینٹرل میلبرن سے 13 کلومیٹر کے فاصلے پر شمال مغرب میں واقع ہے۔

آسٹریلیا کے ٹرانسپورٹ سیفٹی بیورو نے کہا کہ وہ دوہرے انجن والے بیچ کرافٹ بی 200 کنگ ایئر کے سانحے کے بارے میں تفتیش کرے گا۔

اسی بارے میں