یہودی قبرستان کی مرمت کیلیے مسلمانوں کی اپیل پر 85 ہزار ڈالر جمع

یہودی تصویر کے کاپی رائٹ AP

امریکہ کی ریاست مزوری میں خراب کی جانے والی یہودی قبروں کی مرمت کے لیے امریکی مسلمانوں کے قائم کردہ فنڈ میں 85 ہزار ڈالر کی رقم جمع ہو گئی۔

فنڈ جمع کرنے والے لوگوں کا کہنا ہے کہ انھوں نے 20 ہزار ڈالر کی رقم مانگی تھی جبکہ جمع ہونے والی رقم اس سے چار گنا زیادہ ہے۔

امریکی مسلمانوں کے فنڈ اکٹھے کرنے کے پراجیکٹ نے اس 'متبرک جگہ کی تعمیر نو' کے لیے چندہ مانگنے کی مہم کا آغاز کیا تھا۔

مزوری کے شہر سینٹ لوئس میں پیر کے روز یہودیوں کے قبرستان میں نامعلوم افراد نے 170 قبروں کو نقصان پہنچایا۔

اس قبرستان کی مرمت کے لیے فنڈ کی اپیل لنڈا اور طارق المسیدی نے کی تھی اور ان کو تین ہزار افراد نے رقم بھیجی جو کہ کُل 85 ہزار ڈالر ہے۔

اس اپیل کے منتظمین کا کہنا ہے کہ وہ مزید رقم کے لیے اپیل جاری رکھیں گے تاکہ مزوری میں بتاہ کی گئی قبروں کی مرمت کے بعد یہ رقم امریکہ میں کہیں بھی تباہ کی گئیں یہودی قبروں کی مرمت کے کام آ سکیں۔

تصویر کے کاپی رائٹ AP

پیر کے روز امریکہ میں 11 یہودی کمیونٹی سینٹرز بشمول ہیوسٹن، شکاگو اور ملواکی کو بم کی دھمکیاں موصول ہوئی تھیں۔

گذشتہ ہفتے 17 امریکی ریاستوں میں قائم 27 یہودی سینٹرز کو دھمکیاں موصول ہوئی تھیں تاہم ان دھمکیوں کے بعد ان سینٹرز میں سے کوئی مشکوک سامان برآمد نہیں ہوا تھا۔

متعلقہ عنوانات

اسی بارے میں