ہالینڈ: عام انتخابات میں وزیر اعظم کی جماعت سب سے آگے

تصویر کے کاپی رائٹ AP

ہالینڈ میں پارلیمانی انتخابات میں ووٹنگ کے بعد ابتدائی جائزوں کے مطابق وزیر اعظم مارک روٹ کی جماعت نے سب سے زیادہ نشستیں حاصل کی ہیں۔

بدھ کو ایگزٹ پولز کے مطابق وزیر اعظم مارک روٹ کی جماعت وی وی ڈی نے 150 نشستوں میں سے 31 حاصل کر لی ہیں۔

ان کی جماعت اگلی تین جماعتوں ان میں پی وی وی، کرسچین ڈیموکریٹس اور ڈی66 پارٹی شامل ہیں سے بہت آگے نکل گئی ہے۔ ان میں سے ہر جماعت نے 19 ، 19 نشستیں حاصل کی ہیں۔

رائے عامہ کے جائزوں کے مطابق مسٹر وائلڈرز کی جماعت کو برتری حاصل تھی لیکن حالیہ دنوں میں اچانک ان کی جماعت کو حاصل حمایت میں کمی آگئی۔

ماہرین کا کہنا ہے کہ اس عام انتخابات میں ووٹرز کی تعداد کافی زیادہ رہی ہے اور امکان ہے کہ ٹرن آؤٹ 80 فیصد تک پہنچ جائے۔

تصویر کے کاپی رائٹ EPA

جبکہ تجزیہ کاروں کا کہنا ہے کہ ٹرن آؤٹ میں اضافے سے یورپی یونین حامی جماعتوں کو فائدہ ہو سکتا ہے۔

مارک رٹ کی مہم کے سربراہ نے کہا ہے کہ ’ووٹرز نے ایک بار پھر وی وی ڈی پر اعتماد کیا ہے۔‘

ہالینڈ میں ہونے والے ان انتخابات پر لوگ گہری نظر رکھے ہوئے ہیں۔

اس کی کے وجہ یہ بھی ہے کہ ان انتخابات کو آئندہ ماہ فرانس اور ستمبر میں جرمنی میں ہونے والے انتخابات کے نتائج پر اثر انداز ہونے کی علامت کے طور پر دیکھا جا رہا ہے۔

پارلیمانی نشستیں جماعت کو حاصل ہونے والے ووٹوں کے مطابق ہی متعین کی جائیں گی، اس لیے وی وی ڈی پارٹی کو دوسری جماعتوں کے ساتھ اتحاد کی ضرورت پڑ سکتی ہے۔

تصویر کے کاپی رائٹ Getty Images

وی وی ڈی پارٹی کو اکثریت حاصل کرنے کے لیے کم از کم تین جماعتوں کی ضرورت پڑ سکتی ہے۔

دوسری جانب رواں سال کے آغاز تک یورپیئن پارلیمان کے صدر رہنے والے مارٹین سکلز کا کہنا ہے کہ ’انھیں مسٹر وائلڈز کی جماعت کی شکست پر راحت ملی ہے۔‘

انھوں نے جرمن زبان میں ٹویٹ کی : ’ہمیں اوپن اینڈ فری یورپ کے لیے لڑائی جاری رکھنی چاہیے۔‘

خیال رہے کہ ہالینڈ کے دو ترک وزرا کو ملک میں تقاریر کرنے سے روکنے کے بعد ترکی کے صدر رجب طیب اردوغان نے ہالینڈ کو خبردار کیا تھا کہ اسے تعلقات خراب کرنے کی قیمت ادا کرنا پڑے گی۔

گذشتہ دنوں استنبول میں ایک تقریب کے دوران انھوں نے کہا تھا کہ وہ کوئی بھی فیصلہ بدھ کے روز ہونے والے ہالینڈ کے انتخابات کے نتائج آنے کے بعد کریں گے۔

متعلقہ عنوانات

اسی بارے میں