پیرس: آئی ایم ایف کے دفتر میں ’لیٹر بم‘ دھماکہ

فرانس تصویر کے کاپی رائٹ Reuters

فرانس کے دارالحکومت پیرس میں پولیس کے مطابق انٹرنیشنل مونیٹری فنڈ (آئی ایم ایف) کے دفتر میں ایک لیٹر بم پھٹنے سے ایک ملازم زخمی ہوگیا ہے۔

آئی ایم ایف کے ملازم کے ہاتھ اور چہرے پر زخم آئے ہیں اور عملے کو عمارت سے باہر منتقل کر دیا گیا تھا۔

آئی ایم ایف کے ڈائریکٹر کرسٹائن لگارڈ نے آئی ایم ایف کے خلاف اس ’بزدلانہ پرتشدد کارروائی‘ کی مذمت کی ہے۔

دوسری جانب بدھ کو جرمنی کی وزارت خزانہ نے برلن میں ایک پارسل بم وزیرخزانہ وولفگینگ شوئبل کو بھیجنے کی کوشش کو ناکام بنا دیا ہے۔

ایک یونانی بائیں بازو کے گروپ ’کانسپائریسی آف فائر سیلز‘ نے اپنی ویب سائٹ پر دعویٰ کیا ہے کہ انھوں نے یہ پارسل بھیجا تھا۔

آئی ایم ایف کے ڈائریکٹر کرسٹائن لگارڈ کی جانب سے جاری کردہ بیان میں کیا گیا ہے کہ آئی ایم ایف خط کے ذریعے بھیجے گئے بم کی تحقیقات کے لیے فرانسیسی حکام کے ساتھ کام کر رہے ہیں۔

خیال رہے کہ آئی ایم ایف کا شمار ان تین اداروں میں ہوتا ہے جنھوں یورپی کمیشن اور یورپیئن سینٹرل بینک کے ساتھ یونانی حکومت کو بیل آؤٹ پیکج فراہم کیا تھا۔

جرمنی میں وزیرخزانہ شوئیبل جمعرات کو امریکی سیکریٹری خزانہ سٹیون منوچن کے ساتھ ملاقات کریں گے۔

خبررساں ادارے ایف پی نے مقامی پولیس کے حوالے سے بتایا کہ جرمنی کو بھیجا گیا مواد اس انداز میں ڈیزائن کیا گیا تھا کہ اس کو کھولنے میں ’شدید زخم‘ آسکتے تھے اور اسے وزارت کے ڈاک کمرے میں ناکارہ بنایا گیا۔

متعلقہ عنوانات

اسی بارے میں