نازیوں سے موازنے پر جرمن چانسلر کا اردوغان کو انتباہ

  • 21 مار چ 2017
تصویر کے کاپی رائٹ Getty Images

جرمن چانسلر آنگیلا میرکل نے ترک صدر رجب طیب ادوغان کو خبرادار کیا ہے کہ وہ جرمن حکام کا نازیوں سے موازنہ نہ کریں۔

٭’ریلیوں پر بندش نازیوں کی حرکتوں جیسا عمل ہے‘

آنگیلا میرکل نے کہا کہ اگر ترک صدر نے اپنے بیانات جاری رکھے تو ترک سیاستدانوں کی مہماتی تقریبات پر پابندی عائد کر دیں گے۔

خیال رہے کہ رواں ماہ کے آغاز پر ترکی کے صدر رجب طیب اردوغان نے جرمنی کے کئی شہروں میں اپنے حامی ترک شہریوں کی ریلیوں کو روکے جانے پر شدید تنقید کی تھی اور اسے نازی دور کے اقدام سے تشبیہ دی تھی۔

یہ ریلیاں ترکی میں آئندہ ماہ آئینی تبدیلیوں کے لیے ہونے والے ریفرینڈم کے تناظر میں منعقد کی جانی تھیں اور ان کا مقصد جرمنی میں مقیم 30 لاکھ ترک باشندوں کو ووٹ دینے پر آمادہ کرنا تھا۔

اس سلسلے میں جرمن سفیر کو ترک وزارت خارجہ میں طلب کر کے احتجاج بھی ریکارڈ کیا گیا تھا۔

ترکی کے صدر نے اتوار کو ٹی وی پر خطاب کے دوران کہا کہ ’آپ نازی دور کے اقدامات کو لاگو کر کے ٹھیک کر رہے ہیں۔‘

ان کا کہنا تھا کہ ’جب ہمیں انھیں نازی کہہ کر بلاتے ہیں وہ (یورپ) کو اچھا نہیں لگتا، اور متحد ہیں خاص طور پر میرکل۔‘

پیر کو جاپانی وزیراعظم شنزو ایبے سے ملاقات کے بعد پریس کانفرنس سے خطاب میں آنگیلا میرکل نے کہا کہ نازیوں سے ہمارا موازنہ کیے جانے کے عمل کا بند ہونا ضروری ہے۔

ان کا مزید کہنا تھا کہ جرمنی کا یہ حق ہے کہ مستقبل کی صورتحال کو مد نطر رکھ کر ضروری اقدامات کرے۔

جرمن چانسلر نے ترک صدر کا حوالہ دیتے ہوئے کہا کہ اس قسم کے بیانات میں لوگوں کی قربانیوں کو نہیں دیکھا جاتا جن پر مقدمے چلے اور وہ نازیوں کے ہاتھوں مارے گئے۔

جرمن چانسلر کے مطابق ان کے ملک میں ترک سیاست دانوں کو عوامی سطح پر آنے کی اجازت دینے کے لیے جرمنی کے قانون کو ملحوظ خاطر رکھا جائے گا۔

اسی بارے میں