ایوانکا ٹرمپ کو وائٹ ہاؤس میں دفتر دیا جائے گا

ایوانکا ٹرمپ اور جیرڈ کشنر تصویر کے کاپی رائٹ AFP

امریکی انتظامیہ کے ایک افسر نے بتایا ہے کہ صدر ٹرمپ کی صاحبزادی ایوانکا کو وائٹ ہاؤس میں ایک دفتر دیا جائے گا۔

وہ امریکی انتظامیہ کے مرکز ویسٹ ونگ میں کام کریں گی تاہم ان کے عہدے کا کوئی سرکاری نام نہیں ہو گا اور نہ ہی انھیں اس کی تنخواہ ملے گی۔

اس عہدے کی رو سے 35 سالہ ایوانکا کو خفیہ معلومات تک رسائی حاصل ہو گی۔

امریکی اخبار پولیٹیکو کی ایک رپورٹ کے مطابق ایوانکا صدر ٹرمپ کو متنوع امور پر مشاورت فراہم کریں گی۔

ایوانکا ایک فیشن برانڈ کی مالک ہیں۔ ان کے خاوند جیرڈ کشنر پہلے ہی صدر ٹرمپ کے اعلیٰ سطح کے مشیر ہیں۔

تصویر کے کاپی رائٹ EPA
Image caption ایوانکا ٹرمپ عالمی رہنماؤں کے ساتھ ملاقاتوں میں شامل رہی ہیں جن میں انگیلا میرکل بھی شامل ہیں

بعض حلقوں نے اس جوڑے کے امریکی صدر پر اثر و رسوخ پر تشویش ظاہر کی ہے کہ اس سے مفادات کا ٹکراؤ ہو سکتا ہے۔

یہ بحث بھی ہو رہی ہے کہ آیا ٹرمپ کے خاندان اور ان کی تجارتی سرگرمیوں میں واضح سرحد موجود ہے۔

جنوری میں صدر ٹرمپ کی تقرری کے بعد سے ایوانکا بین الاقوامی رہنماؤں کے ساتھ صدر ٹرمپ کی ملاقاتوں میں شامل رہی ہیں، جن میں کینیڈا کے وزیرِ اعظم جسٹن ٹروڈو اور جرمنی کی چانسلر انگیلا میرکل کے ساتھ ملاقاتیں شامل ہیں۔

متعلقہ عنوانات

اسی بارے میں