خالد مسعود کے عمل پر افسردہ اور صدمے میں ہوں: اہلیہ

مسعود تصویر کے کاپی رائٹ Daily Mail/Solo Syndication

لندن میں ویسٹ منسٹر حملہ آور خالد مسعود کی اہلیہ نے اپنے شوہر کے عمل کی مذمت کرتے ہوئے کہا ہے کہ وہ افسردہ اور صدمے میں ہیں۔

پولیس کے ذریعے جاری کیے جانے والے بیان میں حملہ آور کی اہلیہ روحے حیدرا نے اس حملے میں ہلاک ہونے والے افراد کے اہل خانہ کے ساتھ تعزیت کی اور زخمی ہونے والوں کی جلد صحتیابی کی دعا کی۔

لندن حملے میں ہلاک ہونے والے چوتھے شخص کی شناخت ظاہر

لندن میں ویسٹ منسٹر پل پر حملہ: کچھ مزید حقائق

انھوں نے اپنے بیان میں درخواست کی ہے کہ 'اس مشکل وقت میں ان کے خاندان اور خاص طور پر ان کے بچوں کی خلوت کا احترام کیا جائے۔'

ان کے اس بیان سے قبل خالد مسعود کی والدہ نے حملے کی مذمت کی تھی۔

اطلاعات کے مطابق 52 سالہ مسعود کے تین بچے ہیں۔ یاد رہے کہ مسعود کے حملے میں چار افراد ہلاک ہوئے تھے۔

خالد مسعود کینٹ کے شہر ڈارٹ فورڈ میں پیدا ہوئے تھے اور پولیس کے پاس ان کا سابقہ مجرمانہ ریکارڈ موجود تھا، جن میں ہتھیاروں کی برآمدگی اور امنِ عامہ میں خلل ڈالنے کے جرائم شامل ہیں۔

وہ ویسٹ مڈلینڈ میں رہتے تھے اور اس سے قبل وہ ویسٹ سسیکس اور ایسٹ سسیکس میں بھی رہ چکے ہیں۔

متعلقہ عنوانات

اسی بارے میں