ملالہ کے لیے نیا اعزاز 'میسینجر آف پیس'

ملالہ یوسف زئی تصویر کے کاپی رائٹ Getty Images
Image caption ملالہ یوسف زئی کو سنہ 2014 میں نوبل امن انعام سے نوازا گیا تھا

پاکستان کی نوبیل انعام یافتہ ملالہ یوسف زئی اقوام متحدہ کی 'میسنجر آف پیس' یعنی امن کی پیغامبر بنائی جا رہی ہیں۔

اقوام متحدہ کے سیکریٹری جنرل انتونیو گوتیرس نے کہا 19 سالہ ملالہ یوسف زئی پیر سے اپنا کام سنبھالیں گی اور اپنے نئے کردار میں وہ دنیا بھر میں لڑکیوں کی تعلیم کے فروغ میں مدد کریں گی۔

خیال رہے کہ ملالہ یوسف زئی امن کی پیغامبر کا عہدہ سنبھالنے والی اب تک کی سب سے کم عمر فرد ہیں جبکہ امن کا نوبیل انعام حاصل کرنے کے معاملے میں بھی وہ سب سے کم عمر ہیں۔

خبررساں ادارے روئٹرز کے مطابق ملالہ یوسف زئی کو 'امن کے پیغامبر' کی ذمہ داری نیویارک میں اقوام متحدہ کے ہیڈ کوارز میں منعقدہ ایک تقریب کے دوران سونپی جائے گی۔

یہ تقریب پیر کو ٹرسٹی شپ کونسل چیمبر میں منعقد ہوگی۔

سیکریٹری جنرل نے ملالہ یوسف زئی کے انتخاب کے بارے میں کہا کہ ملالہ یوسف زئی سنگین خطرات کے باوجود خواتین، لڑکیوں اور عام انسانوں کے حقوق کے لیے اپنے غیر متزلزل عہد پر قائم رہیں۔

تصویر کے کاپی رائٹ EPA

لڑکیوں کی تعلیم کے لیے ان کی ہمت نے دنیا بھر کے لوگوں میں پہلے ہی تحریک پھونک رکھی ہے۔ اور اب اقوام متحدہ کی سب سے کم عمر امن کی پیغامبر بن کر ملالہ انصاف پرور اور پر امن دنیا بنانے میں مزید کرادار ادا کریں گی۔

ملالہ یوسف زئی 12 جولائی سنہ 1997 میں پاکستان کی وادی سوات میں پیدا ہوئیں۔ سنہ 2012 میں طالبان کی فائرنگ کی زد میں آنے کے بعد وہ دنیا بھر میں لڑکیوں کی تعلیم کے لیے جدو جہد کی علامت بن گئیں۔ حملے میں زندہ بچ جانے کے بعد وہ دنیا بھر میں لڑکیوں کی تعلیم کی علمبردار بن گئیں۔

سنہ 2013 میں ملالہ اور ان کے والد ضیاء الدین یوسف زئی نے لڑکیوں میں بیداری پیدا کرنے کے لیے ملالہ فاؤنڈیشن قائم کی۔ ملالہ یوسف زئی دس دسمبر 2014 میں دنیا کی سب سے کم سن نوبل امن انعام جیتنے والی شخصیت بن گئی تھیں۔

متعلقہ عنوانات

اسی بارے میں