نائجیریا: خواتین پولیس اہلکاروں کے بال کاٹنے والے کمانڈر کے خلاف کارروائی

نائجیریا تصویر کے کاپی رائٹ FRSC RIVERS STATE/FACEBOOK

افریقی ملک نائجیریا میں سڑکوں پر حادثات سے بچاؤ کے ادارے نے بطور سزا خواتین اہلکاروں کے بال کاٹنے پر اپنے ایک سینیئر کمانڈر کے خلاف کارروائی کی ہے۔

یہ کارروائی ایک ویڈیو سامنے کے بعد کی گئی جس میں مذکورہ کمانڈر نے دو قینچیاں ہاتھوں میں تھام رکھی تھیں اور خواتین اہلکاروں کے لمبے بال کاٹتے دکھائی دے رہے تھے۔

اس ویڈیو کے سامنے آنے کے بعد سوشل میڈیا پر شدید ردعمل سامنے آیا ہے۔

سڑکوں پر حادثات سے تحفظ دینے والے ادارے 'ایف آر ایس سی' میں خواتین اہلکاروں کے بالوں سے متعلق قواعد و ضوابط موجود ہیں تاہم ادارے کے ایک ترجمان کے مطابق کمانڈر نے اختیارات سے تجاوز کیا۔

تصویر کے کاپی رائٹ FRSC RIVERS STATE/FACEBOOK

نائجیریا کے صدر محمدو بوہاری کی ایک قریبی ساتھی لوریتا اونوچی نے ٹوئٹر پر ایک پوسٹ پر خواتین اہلکاروں کے بال کاٹنے کے اقدام کو'خواتین کی تضحیک' قرار دیا۔

اطلاعات کے مطابق 'ایف آر ایس سی' کے علاقائی کمانڈر اینڈریو کمپائی نے پیر کی صبح پورٹ ہارکورٹ شہر میں ہونے والی پریڈ میں سزا کے طور پر خواتین اہلکاروں کے بال کاٹے۔

کمانڈر اینڈریو کمپائی نے ابھی تک اپنا ردعمل نہیں دیا ہے۔

'ایف آر ایس سی'کی پریڈ میں شامل ہونے والی خواتین کے لیے موجود قواعد و ضوابط کے مطابق انے بال لازماً ٹوپی کے نیچے ہونے چاہییں لیکن ان قواعد میں لمبے بالوں پر پابندی کے بارے میں کچھ نہیں کیا گیا۔

تصویر کے کاپی رائٹ FRSC RIVERS STATE/FACEBOOK

ادارے کے فیس بک صفحے پر اس واقعے کی ایک پوسٹ شائع ہوئی تھی جسے اب ہٹا دیا گیا گیا ہے تاہم اس واقعے کی تصاویر کو ہزاروں بار فیس بک پر شیئر کیا گیا ہے۔

اس پوسٹ میں کہا گیا تھا کہ اینڈریو کمپائی سٹاف کے بالوں، یونیفام اور ناخنوں کا معائنہ کر رہے ہیں۔

متعلقہ عنوانات

اسی بارے میں