’سیٹ خالی کریں نہیں تو جیل بھیج دیا جائے گا`، ڈیلٹا ایئر لائن کو تنقید کا سامنا

تصویر کے کاپی رائٹ BRIAN SCHEAR

امریکی ایئر لائن ڈیلٹا کی جانب سے بچے کی سیٹ خالی نہ کرنے پر ایک خاندان کو جہاز سے باہر نکالنے پر تنقید کا سامنا ہے۔

اس واقعے کی یوٹیوب پر شیئر کی گئی ویڈیو میں جہاز کے عملے کے ایک رکن کو یہ کہتے سنا جا سکتا ہے کہ 'یہ وفاقی جرم ہے اس کے نتیجے میں آپ اور آپ کی اہلیہ جیل جا سکتے ہیں جب کہ آپ کے بچوں کو رضاعی والدین کے مرکز میں بھیجا جا سکتا ہے۔'

٭ یونائیٹڈ ایئر لائن متاثرہ مسافر کو معاوضہ دے گی

یوٹیوب پر اس ویڈیو کو 20 لاکھ بار دیکھا جا چکا ہے جبکہ ڈیلٹا ایئر لائن نے اس واقعے پر ایک بیان میں کہا ہے کہ 'اس تکلیف دہ تجربے پر ہم معذرت خواہ ہیں اور خاندان کو زرتلافی ادا کیا جائے گا۔'

خیال رہے کہ مسافروں سے بدسلوکی کا یہ واقعہ ایک ایسے وقت آیا ہے جب امریکہ میں ہی گذشتہ ماہ کے آغاز پر یونائیٹڈ ایئرلائنز کی شگاگو سے جانے والی ایک پرواز کے اڑان بھرنے سے قبل 69 سالہ مسافر ڈاکٹر ڈیوڈ دؤ کو گھسیٹ کر طیارے سے باہر نکال دیا گیا تھا۔

ڈاکٹر ڈیوڈ دؤ کو جہاز سے گھسیٹ کر نکالنے کی ویڈیو وائرل ہوئی جس پر یونائیٹڈ ایئر لائن کو معافی مانگنی پڑی تھی جبکہ بعد میں ایئر لائن نے ان سے مالی سمجھوتہ کر لیا تھا۔

تازہ واقعہ 23 اپریل کو ہوائی سے لاس اینجلس جانے والی فلائٹ پر پیش آیا۔

آٹھ منٹ کی ویڈیو میں برائن شیئر کی عملے سے بحث کو سنا جا سکتا ہے جس میں وہ کہتے ہیں کہ انھوں نے سیٹ کے لیے رقم ادا کی ہے جبکہ عملے کے ارکان ان کو قائل کرنے کی کوشش کر رہے ہیں کہ وہ سیٹ خالی کر دیں۔

برائن شیئر نے دعویٰ کیا کہ جہاز میں گنجائش سے زیادہ مسافروں کی بکنگ کی گئی تھی۔

برائن شیئر کے مطابق اصل میں انھوں نے اس سیٹ کو اپنے بڑے بیٹے کے لیے بک کیا تھا تاہم انھیں اس سے پہلی فلائٹ پر بھیج دیا تاکہ ان کے دوسرے بچے کو جہاز میں سیٹ ملے سکے۔

پہلے تو عملے نے بتایا کہ چونکہ یہ سیٹ ان کے دوسرے بیٹے کے نام پر بک ہوئی ہے تو چھوٹا بیٹا اس پر سفر نہیں کر سکتا۔

برائن شیئر کا کہنا ہے کہ ان کا بیٹا چائلڈ سیفٹی سیٹ یا بچوں کے لیے مختص حفاظتی سیٹ پر بیٹھا تھا۔ تاہم عملے نے دعویٰ کیا کہ فیڈرل ایوی ایشن انتظامیہ کے قواعد و ضوابط کے تحت بچوں کو بالغ افراد کے لیے مختص نشستوں پر بیٹھنا ہو گا۔

انھوں نے کہا ہے کہ یہ دعویٰ ڈیلٹا ایئر لائن کی اس ہدایت کے خلاف ہے جس میں تجویز کیا گیا ہے کہ دو برس سے کم عمر بچوں کے لیے سیٹ خریدیں اور اس کو بچوں کی سیفٹی کے لیے منظور کردہ سیٹ کے طور پر استعمال کریں۔

متعلقہ عنوانات

اسی بارے میں