بنا پرمٹ فیس ادا کیے ایورسٹ پر چڑھنے والا شخص گرفتار

رائن تصویر کے کاپی رائٹ Image copyrightRYAN SEAN DAVY/FACEBOOK

ایک شخص کو پرمٹ فیس 11 ہزار ڈالر ادا کیے بغیر ماؤنٹ ایورسٹ پر چڑھنے کے جرم میں حراست میں لے لیا گیا ہے جبکہ حکام نے ان سے کہا ہے کہ وہ بھاری جرمانے کی توقع بھی رکھیں۔

جنوبی افریقہ سے تعلق رکھنے والے 43 سالہ رائن شان ڈیوی کا کہنا ہے کہ جب انھیں پکڑا گیا تو وہ ایک غار میں چھپے ہوئے تھے، جبکہ اس سے قبل تک وہ تنہا سات ہزار تین سو میٹر کی بلندی پر پہنچ چکے تھے۔

رائن نے اپنے اس عمل پر معافی مانگنے کے ساتھ ساتھ شکایت کی کہ ان کے ساتھ ’ایک قاتل جیسا برتاؤ کیا گیا۔‘

کسی بھی شخص کے لیے تنہا ماؤنٹ ایورسٹ پر چڑھنا انتہائی غیر معمولی ہے۔

بہت سے کوہ پیماؤں کو دنیا کی بلند ترین پہاڑی پر جانے کے لیے کم از کم ایک گائیڈ اور بیس کیمپ پر تمام سامان سے لیس ایک ٹیم کی ضرورت ہوتی ہے۔

تصویر کے کاپی رائٹ AFP

واضح رہے کہ نیپال کی آمدن کا بڑی حد تک دارومدار ایورسٹ پر ہونے والی کوہ پیمائی پر ہوتا ہے۔

خبر رساں ادارے اے ایف پی کو حکام نے بتایا ہے کہ رائن ڈیوی نے سرکاری کوہ پیماؤں سے اس وقت چھپنے کی کوشش کی جب انھیں بیس کیمپ کے پاس دیکھا گیا۔

تصویر کے کاپی رائٹ AFP

حکام کے مطابق کوہ پیماؤں نے ان کا پیچھا کیا گیا تو وہ ایک کیمپ میں پائے گئے جو انھوں نے ایک غار میں بنا رکھا تھا۔

رائن ڈیوی نے فیس بک پر کہا ہے کہ ’کوہ پیمائی سے متعلق کمپنیوں کے پاس ان کوہ پیماؤں کے پاس وقت نہیں ہوتا جن کے پاس پیسے نہ ہوں۔‘

ان کا کہنا ہے کہ ’مجھے بیس کیمپ پر اتنا ہراساں کیا گیا کہ مجھے لگا جیسے مجھے سنگسار کر کے مار دیا جائے گا۔‘

انھوں نے بتایا کہ ان کا پاسپورٹ ضبط کر لیا گیا ہے اور انھیں کھٹمنڈو بھیج دیا گیا ہے جہاں وہ کچھ وقت جیل میں گزاریں گے جبکہ 22 ہزار ڈالر جرمانہ ہونے کی توقع بھی ہے۔

اسی بارے میں