روس میں مسافروں کے لیے ایسی بس جو پہلے میتّ گاڑی تھی

تصویر کے کاپی رائٹ SUPEROMSK.RU

عام طور پر بسیں سفر کے لیے آرام دہ نہیں سمجھی جاتی ہیں لیکن روس کے شہر اومسک میں بعض بسیں خاص طور پر مسافروں کو بے آرام کر رہی ہیں۔

سپر آمسک ڈاٹ آر یو کے مطابق بعض بسوں میں تو عام طور پر بس میں دونوں جانب آخر تک نصب نشستوں کی جگہ مسافروں کو ’عجیب سی صورتحال کا سامنا کرنا پڑا جب آخر میں نشست نہیں تھی اور اضافی ریڈی ایٹر لگا تھا۔‘

نجی کمپنیوں کی جانب سے چلائی جان والی بسیں ماضی میں بطور میّت گاڑیوں چلائی جاتی تھیں، جن میں پیچھے میت رکھنے اور اٹھانے کے لیے جگہ بنی ہوتی تھیں، نشستوں کی جگہ بینچیں تاکہ سوگواران میّت کی دونوں جانب بیٹھ سکیں۔ ان بسوں میں پردے بھی لگائے گئے تھے۔

روس میں کئی عرصوں تک ایسا ہوتا رہا ہے کہ سوگواران جنازے کے ساتھ ایک ہی گاڑی میں سفر کرتے تھے۔ لہذا یہ سب وہ کچھ ہے جو کہ ایک میّت گاڑی میں ہو سکتا ہے لیکن ان بسوں میں نہیں جن پر آپ اپنے دن کے آغاز پر سفر کرتے ہیں۔

یہ پریشان کن خبر روسی سوشل میڈیا نیٹورک وی کانٹکٹی پر شائع کی گئی جس کی تصاویر پر غیر معمولی رد عمل دیکھنے کو ملا ہے:

ایک صارف نے لکھا: ’یہ آمسک کے شہریوں کو روشن مستقبل کے لیے تیار کر ہے ہیں۔‘

ایک اور صارف نے مذاق کرتے ہوئے کہا کہ ’آمسک کی سڑکوں کی حالت دیکھ کر یہ بہت مفید ثابت ہو سکتی ہیں۔‘

تصویر کے کاپی رائٹ WIKIMEDIA/ARTEM SVETLOV

اسی بارے میں