امریکہ میں مسلمان خواتین کو دھمکانے سے روکنے پر دو افراد قتل

پورٹ لینڈ تصویر کے کاپی رائٹ CBS/EVN
Image caption یہ واقعہ ایک ٹرین پر اس وقت پیش آیا جب وہ سٹیشن پر کھڑی تھی

امریکہ کے شہر پورٹ لینڈ میں پولیس کا کہنا ہے کہ ایک شخص نے دو افراد کو اس وقت قتل کر دیا جب وہ اسے مسلمان خواتین کو برا بھلا کہنے سے روکنے کی کوشش کر رہے تھے۔

پولیس کے مطابق اس شخص نے دو آدمیوں پر حملہ کیا اور ان پر بری طرح چاقو سے وار کیے۔

یہ واقعے ایک مسافر ٹرین پر پیش آیا۔ حملہ آور کو گرفتار کر لیا گیا۔ ایک اور مسافر بھی اس دوران زخمی ہو گئے۔

کیا امریکی ویزا پالیسی مسلمان مخالف ہے؟

’2050 میں ہر تیسرا شخص مسلمان ہو گا‘

امریکہ کی پہلی مسلمان خاتون جج کی لاش دریا سے برآمد

کونسل آن امریکن اسلامک ریلیشنز نے صدر ٹرمپ پر زور دیا ہے کہ وہ امریکہ میں بڑھتے ہوئے اسلاموفوبیا کے خلاف بات کریں۔

انھوں نے صدر پر الزام لگایا کہ ان کے بیانات اور پالیسیوں کی وجہ سے اس رجحان میں اضافہ ہوا ہے۔

پولیس نے ایک بیان میں کہا ہے کہ حملہ مقامی وقت کے مطابق شام 4:30 منٹ پر ہالی وڈ ٹرانزٹ سٹیشن پر ایک ٹرین میں کیا گیا۔ ایک متاثرہ شخص موقع پر ہی ہلاک ہو گئے جبکہ دوسرے کی موت ہسپتال پہنچنے کے بعد ہوئی۔

پولیس نے ملزم کی شناخت جیریمی جوزف کرسچیئن کے نام سے ظاہر کی ہے جن کی عمر 35 سال ہے۔ پولیس نے ان پر قتل، اقدامات قتل، ڈرانے دھمکانے اور ممنوعہ ہتھیار رکھنے جیسے جرائم کا الزام عائد کیا ہے۔

اطلاعات کے مطابق جن دو خواتین کو برا بھلا کہہ رہا تھا ان میں سے ایک نے سر پر سکارف پہنا ہوا تھا۔

متعلقہ عنوانات

اسی بارے میں