سعودی عرب کے شہر قطیف میں ’کار میں دھماکہ‘، دو ہلاک

قطیف میں شیعہ فرقے کی ایک مسجد میں مئی 2015 میں خودکش حملے کے بعد کا منظر تصویر کے کاپی رائٹ AFP
Image caption قطیف میں شیعہ فرقے کی ایک مسجد میں مئی 2015 میں خودکش حملے کے بعد کا منظر

سعودی عرب کے مشرقی شہر قطیف میں ایک کار میں دھماکے سے کم از کم دو افراد ہلاک ہوگئے ہیں۔

مقامی ذرائع ابلاغ کے مطابق ایک ویڈیو میں شہر کے مرکزی علاقے میں ایک گاڑی کو آگ لگتے جبکہ دیگر تصاویر میں گاڑی کے اندر جلی ہوئی لاشیں دیکھی جا سکتی ہیں۔

قطیف میں فائرنگ سے دو پولیس اہلکار ہلاک

سعودی عرب:'مسجد پر حملے کی کوشش، حملہ آور ہلاک'

سعودی عرب کی مقامی ویب سائٹ العریبیہ کا کہنا ہے کہ ابتدائی اطلاعات کے مطابق دھماکہ خیز مواد سے لدی گاڑی میں سوار دونوں افراد العوامیہ کے علاقے میں تشدد کے حالیہ واقعات میں مطلوب تھے۔

العریبیہ کے مطابق یہ افراد اس گاڑی کو العوامیہ ہی لے جانے کی کوشش کر رہے تھے۔

ان دونوں افراد کے علاوہ کسی کے ہلاک یا زخمی ہونے کے اطلاع نہیں ہے۔

ایک مقامی رہائشی نے خبررساں ادارے روئٹرز کو بتایا کہ اس نے دھماکے کی آواز سنی اور علاقے سے اٹھتا ہوا دھواں دیکھا۔

اس شخص کا کہنا تھا کہ سعودی پولیس نے علاقے کو گھیرے میں لیا ہے۔

تاحال سعودی حکام کی جانب سے اس واقعے کے بارے میں کوئی بیان جاری نہیں کیا گیا۔

واضح رہے کہ تیل سے مالا مال صوبے قطیف میں شیعہ بڑی تعداد میں آباد ہیں اور یہاں ماضی میں سعودی عرب کی سنی بادشاہت کے خلاف کئی احتجاجی تحریکیں دیکھی گئی ہیں۔ قطیف میں اس سے پہلے شدت پسندی کے واقعات میں شیعہ آبادی کو نشانہ بنایا جا چکا ہے۔

اسی بارے میں