عراق: موصل کی تاریخی مسجد النوری تباہ کر دی گئی

تصویر کے کاپی رائٹ IRAQI JOINT OPERATION COMMAND
Image caption جائے وقوع کی تازہ ترین تصاویر میں مسجد اور اس کا مینار تباہ شدہ دیکھا جا سکتا ہے۔

عراق کے وزیراعظم نے شدت پسند تنظیم دولتِ اسلامیہ کی جانب سے موصل کی مسجد النوری تباہ کیے جانے کو تنظیم کی شکست کا اعتراف قرار دیا ہے۔

عراقی اور امریکی فوج کا کہنا ہے کہ مسجد کے مینار کو دولتِ اسلامیہ نے دھماکے سے اڑا دیا تھا۔

تاہم دولتِ اسلامیہ کے خبر رساں ادارے العماق کا کہنا ہے کہ اس مسجد کو ایک امریکی لڑاکا طیارے نے نشانہ بنایا۔

٭ خلافت، موصل اور مسجد النوری

٭ موصل کی آزادی کا معرکہ شروع

٭ موصل کی جنگ

علاقے کی فضا سے لی گئی تصاویر میں بڑے پیمانے پر تباہی دیکھی جا سکتی ہے۔

اس تباہی کی بڑے پیمانے پر مذمت کی گئی ہے۔

یہ وہی معروف مسجد ہے جہاں 2014 میں ابو بکر البغدادی نے خلافت کا دعویٰ کیا تھا۔ اس مسجد کے مینار کا جھکاؤ ایک طرف تھا۔

موصل کے معرکے پر عراقی فورس کے کمانڈر کا کہنا ہے کہ جس وقت دولتِ اسلامیہ نے ’تاریخ کے خلاف یہ جرم کیا‘ اور مسجد کو تباہ کیا اس وقت ان کے فوجی 50 پچاس میٹر کی دوری پر تھے۔

ادھر ایک امریکی کمانڈر کا کہنا تھا کہ دولتِ اسلامیہ نے موصل اور عراق کا ایک خزانہ تباہ کر دیا ہے۔

تصویر کے کاپی رائٹ AFP
Image caption یہ وہی معروف مسجد ہے جہاں 2014 میں ابو بکر البغدادی نے خلافت کا دعویٰ کیا تھا۔ اس مسجد کے مینار کا جھکاؤ ایک طرف تھا۔

میجر جنرل جوژف مارٹن کا کہنا تھا کہ ’یہ عراق اور موصل کے عوام کے خلاف ایک جرم ہے اور اس بات کی مثال ہے کہ اس تنظیم کو کیوں تباہ کر دیا جانا چاہیے۔‘

عراق اور شام میں متعدد تاریخی ثقافتی مقامات کو تباہ کیا جا چکا ہے۔

اقوام متحدہ کا کہنا ہے کہ دولتِ اسلامیہ موصل میں ایک لاکھ شہریوں کو انسانی ڈھالوں کے طور پر استعمال کر رہے ہیں۔

تصویر کے کاپی رائٹ AFP
Image caption اقوام متحدہ کا کہنا ہے کہ دولتِ اسلامیہ موصل میں ایک لاکھ شہریوں کو انسانی ڈھالوں کے طور پر استعمال کر رہے ہیں۔

ہزاروں عراقی سکیورٹی فورسز، کردش پیشمرگا جنگجوؤں، سنی عرب قبائلیوں اور شیعہ ملیشیا کے اراکین امریکی اتحادی فورسز کے ساتھ مل کر اکتوبر 2016 سے موصل کے معرکے میں دولتِ اسلامیہ کے خلاف لڑ رہے ہیں۔

حکومت نے مشرقی موصل کو آزاد کروا لینے کا اعلان جنوری 2017 میں کیا تھا تاہم شہر کا مغربی حصہ آزاد کروانا قدرے مشکل ثابت ہو رہا ہے۔

متعلقہ عنوانات

اسی بارے میں