قطر پر پابندیاں برقرار رہیں گی: سعودی عرب

تصویر کے کاپی رائٹ Reuters

سعودی عرب اور اس کے تین عرب اتحادی ممالک کی جانب سے قطر کو پیش کیے گئے مطالبات مسترد کیے جانے کے بعد قطر پر پابندیاں برقرار رکھنے کا کہا ہے۔

بدھ کو قاہرہ میں چار عرب ممالک کے وزرا خارجہ کے درمیان ہونے والی ملاقات میں کہا گیا ہے کہ انھیں مطالبات کی فہرست پر قطر کے ’منفی‘ ردعمل پر افسوس ہوا ہے۔

وزرا خارجہ کا کہنا تھا کہ ’قطر نے صورتحال کی سنجیدگی اور اہمیت کو سمجھنے کی کوشش نہیں کی۔‘

سعودی قطر تنازع: ’بیٹیوں کا نام ال سعودی اور قطر‘

قطر سعودی کشمکش میں پھنسے اونٹ

’قطر کو جب تک ضرورت ہے خوراک بھیجیں گے‘

خیال رہے کہ سعودی عرب سمیت چار عرب ممالک مصر، بحرین اور متحدہ عرب امارات نے قطر پر الزام عائد کیا تھا کہ وہ انتہاپسندی کی معاونت کر رہا ہے۔

یاد رہے کہ اتوار کو جب قطر کو دی جانے والی دس روزہ ڈیڈ لائن ختم ہو گئی تھی تو اسے عرب ممالک نے مزید 48 گھنٹوں کی مہلت دی تھی۔

تصویر کے کاپی رائٹ Reuters

اس سے قبل سعودی عرب نے بدھ کو کہا تھا کہ چاروں ممالک کو قطر کا جواب موصول ہوا ہے اور وہ اس کا 'درست وقت پر' جواب دیں گے۔

چار عرب ممالک کے وزرا خارجہ کے درمیان یہ ملاقات ایک ایسے وقت میں ہوئی ہے جب ایک روز قبل ہی ان چاروں ممالک کی خفیہ ایجنسیوں کے سربراہان نے قاہرہ میں ملاقات کی تھی۔

قطر کے وزیرِ خارجہ شیخ محمد بن عبدالرحمن الثانی نے پیر کو سرکاری جواب کویتی حکام جو کہ اس معاملے میں ثالث کا کردار ادا کر رہا ہے کے حوالے کیا تھا تاہم اس جواب کو ابھی تک خفیہ رکھا گیا ہے۔

متعلقہ عنوانات

اسی بارے میں