’امریکی فوج شمالی کوریا سے نمٹنے کے لیے تیار ہے‘، ٹرمپ کا ایک اور دھمکی آمیز پیغام

ٹرمپ تصویر کے کاپی رائٹ AFP
Image caption ڈونلڈ ٹرمپ نے کہا تھا کہ پیانگ یانگ کو 'آگ اور غصے'کا سامنا کرنا پڑے گا

امریکہ کے صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے شمالی کوریا کو ایک اور دھمکی آمیز پیغام میں کہا ہے کہ امریکی فوج شمالی کوریا سے نمٹنے کے لیے بالکل تیار ہے۔

صدر ٹرمپ نے ایک ٹویٹ میں کہا کہ ’عسکری حل اب بالکل موجود ہے، 'لاکڈ اینڈ لوڈڈ'، کیا شمالی کوریا دانشمندی کا مظاہرہ کرے گا۔ امید ہے کم جونگ ان کوئی اور راستہ اختیار کریں گے۔‘

ڈونلڈ ٹرمپ کا یہ بیان ایسے وقت میں سامنے آیا ہے جب شمالی کوریا نے ڈونلڈ ٹرمپ پر ’جوہری جنگ کے دہانے پر پہنچانے‘ کا الزام عائد کیا ہے۔

شمالی کوریائی کارٹون میں ’امریکہ مخالف‘ پیغام

حملے کی صورت میں آسٹریلیا ‘امریکہ کی مدد کرے گا‘

شمالی کوریا کا گوام کو دنوں میں نشانہ بنانے کا وعدہ

حال ہی میں شمالی کوریا نے بحر الکاہل میں واقع امریکی اڈے گوام کو پانچ میزائلوں سے نشانہ بنانے کا اعلان کیا تھا۔ جبکہ امریکی ہوم سکیورٹی کی جانب سے جمعے کو اس جزیرے کے رہائشیوں کو میزائل حملے کے خطرے کے پیش نظر اقدامات کی ہدایات جاری کی گئی ہیں۔

بدھ کو شمالی کوریا کے سرکاری خبر رساں ادارے نے کہا تھا کہ ’شمالی کوریا گوام کے پاس کے علاقوں کو حصار میں لینے والی آگ کے منصوبے کے بارے میں غور کر رہا ہے۔‘

دوسری جانب ماسکو نے کہا ہے کہ واشنگٹن اور پیانگ یانگ کے درمیان دھمکیوں کا تبادلہ ’ہمارے لیے پریشانی کا باعث ہے۔‘

روسی وزیر خارجہ سرگئی لاوروف نے اس عسکری تنازعے کو ’انتہائی شدید‘ نوعیت کا قرار دیا ہے اور انھوں نے اس کے حل کے لیے روس اور چین کے ایک مشترکہ منصوبے کو پیش کیا ہے۔

اس سے قبل ڈونلڈ ٹرمپ نے کہا تھا کہ پیانگ یانگ کو 'آگ اور غصے' کا سامنا کرنا پڑے گا۔

تصویر کے کاپی رائٹ AFP
Image caption شمالی کوریا نے بحر کاہل میں واقع امریکی اڈے گوام کو پانچ میزائلوں سے نشانہ بنانے کا اعلان کیا تھا

ڈونلڈ ٹرمپ کی حالیہ دھمکی امریکی سیکریٹری دفاع جم میٹس کی جانب سے تنازعے کے پرامن حل اور کشیدگی میں کمی کرنے کی کوششوں کے چند گھنٹوں بعد سامنے آئی ہے۔

خیال رہے کہ امریکی وزیرِ دفاع جیمز میٹس نے شمالی کوریا سے کہا ہے کہ وہ ایسے اقدامات کرنے سے گریز کرے جو ’اسے اس کی حکومت کے خاتمے اور عوام کی تباہی کی جانب لے جائیں۔‘

جیمز میٹس کا کہنا تھا کہ شمالی کوریا کا امریکہ اور اس کے اتحادیوں کے خلاف ’جنگ میں کوئی جوڑ نہیں ہے۔‘

خیال رہے کہ گوام میں امریکہ کے جنگی بمبار طیارے تعینات ہیں اور حالیہ دنوں ان کے درمیان شدید قسم کی بیان بازیوں کا سلسلہ چل نکلا ہے۔

گذشتہ دنوں اقوام متحدہ نے شمالی کوریا پر مزید پابندیاں عائد کرنے کی قرارداد کو متفقہ طور پر تسلیم کیا تھا جس پر پیانگ یانگ نے اپنی ’خود مختاری کی متشدد خلاف ورزی‘ سے تعبیر کرتے ہوئے امریکہ کو اس کی ’قیمت چکانے‘ کی دھمکی دی تھی۔

متعلقہ عنوانات

اسی بارے میں