امریکہ: شیر کے بچے کو سمگل کرنے والا نوجوان گرفتار

ٹائیگر کا بچہ تصویر کے کاپی رائٹ US CUSTOMS AND BORDER PROTECTION
Image caption امریکہ میں محکمہ 'وائلڈ لائف سروس' کے حکام نے اس بنگالی نسل کے شیر کے بچے کو اپنی تحویل میں لے لیا ہے

امریکی ریاست کیلی فورنیا میں ایک نوجوان کو شیر کے ایک بچے کو میکسیکو سے امریکہ میں سمگل کرنے کے جرم میں گرفتار کیا گیا ہے۔

امریکہ اور میکسیکو کی سرحد پر حکام نے دیکھا کہ 18 سالہ لوئس یدورو ولینیکا کی کار میں شیر کا ایک بچہ ہے تبھی انھیں اس کی سمگلنگ کے الزام میں حراست میں لیا گيا۔

لوئس کو اوٹے میسا کی سرحد پر بدھ کی علی الصبح سرحد کراس کرتے وقت پکڑا گيا تھا۔

امریکہ میں محکمہ 'وائلڈ لائف سروس' کے حکام نے اس بنگالی نسل کے شیر کے بچے کو اپنی تحویل میں لے لیا ہے۔

نوجوان کا کہنا ہے کہ اس نے اس شیر کے بچے کو میکسیکو کے شہر تیجوانا میں اس شخص سے تین سو ڈالر میں خریدا تھا جو ایک بڑے شیر کے ساتھ سڑک پر چہل قدمی کر رہا تھا۔

تصویر کے کاپی رائٹ US CUSTOMS AND BORDER PROTECTION
Image caption اس شیر کے بچے کو مقامی وائلڈ لائف کے حکام کے حوالے کیا گيا ہے جہاں پر اس کا پورا خیال رکھا جا رہا ہے

سان ڈیئگو میں 'کسٹم اینڈ بارڈر پروٹیکسن' کے ڈائریکٹر پیٹ فلور‎س کا کہنا تھا کہ سرحد پر محکمہ کسٹم کے حکام کو بیشتر اوقات اس طرح کے غیر معمولی واقعات کا سانا کرنا پڑتا ہے۔

انھوں نے کہا: 'اوٹے میسا کی سرحدی انٹری پر حکام نے چیلنجوں کا بڑی مستعدی سے سامنا کیا اور معدومیت سے دوچار جانور کی زندگي بچانے میں مدد کی۔'

تمام نسل کے شیر قانونی طور محفوظ نسل کے جانوروں کی فہرست میں شامل ہیں اورایسے کسی بھی جانور کو امریکہ میں لانے کے لیے اجازت لینا ضروری ہوتا ہے۔

اس شیر کے بچے کو مقامی وائلڈ لائف کے حکام کے حوالے کیا گيا ہے جہاں پر اس کا پورا خیال رکھا جا رہا ہے۔

متعلقہ عنوانات

اسی بارے میں