امریکی خاتون کو اپنے ہی کتوں نے مار ڈالا

تصویر کے کاپی رائٹ CBS

امریکی ریاست ورجینیا کے دیہی علاقے کی پولیس نے ایک خاتون کی پریشان کر دینے والی تفصیلات جاری کی ہیں جن کے مطابق گذشتہ ہفتے چہل قدمی کرتے ہوئے ان کو اپنے ہی دو پالتو کتوں نے حملہ کر کے ہلاک کر دیا۔

چار روز کے بعد جب 22 سالہ بیتھنی سٹیفنز کی لاش ملی تو پولیس نے ان کی ہلاکت کے بارے میں بتانے کے لیے ایک پریس کانفرنس کی۔

جمعے کے روز جب پولیس اہلکاروں کو کتے ملے تو ان کے مطابق وہ سمجھے کے یہ کتے کسی مردہ جانور کی لاش کے گرد کھڑے ہیں۔

تاہم بعد میں معلوم ہوا کہ وہ سٹیفینز کی لاش تھی اور پولیس کے مطابق پٹ بل نسل کے یہ کتے اسے کھا رہے تھے۔

گوچ لینڈ کاؤنٹی پولیس کے اہلکار جم ایگنیو نے بتایا کہ ابتدائی بڑے زخم جو بیتھنی کو آئے تھے ’وہ ان کے گلے اور چہرے پر تھے‘۔

انھوں نے مزید بتایا کہ ’ایسا لگتا ہے کہ کتوں نے پہلے انھیں زمین پر گرایا، جس سے وہ بے ہوش ہو گئیں اور پھر انہی کتوں نے ان پر حملہ کر کے انھیں مار ڈالا۔‘

پولیس اہلکار ایگنیو نے پیر کو پریس کانفرنس میں بتایا کہ وہ ابتدائی طور پر ہلاک ہونے والی خاتون کے گھر والوں کا سوچ کر ان کی تصاویری تفصیلات جاری نہیں کرنا چاہتے تھے۔

تاہم ان کے مطابق جب بعد میں ورجینیا میں رچمنڈ سے کوئی 48 کلومیٹر دور اس چھوٹے سے گاؤں میں افواہیں گردش کرنے لگیں اور یہاں کے رہائشی کافی پریشان ہونے لگے تو انھوں نے یہ تفصیلات بتانے کا فیصلہ کیا تاکہ سب کو معلوم ہو جائے کہ اس گاؤں میں کوئی قاتل نہیں ہے۔

متعلقہ عنوانات

اسی بارے میں