ٹرمپ کے ساتھ تعلقات: ’پورن سٹار کو خاموشی کے لیے ایک لاکھ ڈالر دیے گئے‘

تصویر کے کاپی رائٹ Getty Images

امریکی میڈیا کے مطابق ڈونلڈ ٹرمپ کے وکیل نے ایک سابق پورن سٹار کو ٹرمپ کے ساتھ مبینہ جنسی تعلق کے بارے میں خاموش رہنے کے لیے ایک لاکھ ڈالر دیے۔

امریکی میڈیا کا کہنا ہے کہ رقم کی ادائیگی صدارتی انتخاب سے ایک ماہ قبل ادا کی گئی۔ یہ وہ وقت تھا جب ڈونلڈ ٹرمپ پر خواتین کے ساتھ ناروا سلوک کے حوالے سے ان پر تنقید کی جا رہی تھی اور وہ ان الزامات کی تردید کر رہے تھے۔

ٹرمپ: نئی کتاب میں 11 چونکا دینے والے انکشافات

امریکی اخبار وال سٹریٹ جرنل کے مطابق ڈونلڈ ٹرمپ کے وکیل مائیکل کوہن نے یہ رقم پورن سٹار سٹیفنی کلفرڈ، جن کا فلمی نام سٹورمی ڈینیئلز ہے، کو اس وقت دی تھی جب وہ اس مبینہ ملاقات کو منظر عام پر لانے والی تھیں۔

ایک اور امریکی اخبار نیو یارک ٹائمز کا کہنا ہے کہ کوہن نے اس ملاقات کی تردید کی ہے تاہم انھوں نے رقم کی ادائیگی کا ذکر نہیں کیا۔

دوسری جانب پورن سٹار سٹیفنی نے بھی خاموش رہنے کے لیے رقم ملنے کی تردید کی ہے۔

میڈیا کے مطابق یہ مبینہ ملاقات اس وقت ہوئی تھی جب ٹرمپ کی اپنی تیسری بیوی ملانیا سے شادی ہوئے ایک سال ہو گیا تھا اور وہ حاملہ تھیں۔

وال سٹریٹ جرنل کے مطابق یہ رقم سٹیفنی کو اس وقت دی گئی جب وہ اکتوبر 2016 میں اے بی سی ٹی وی چینل کے پروگرام ’گُڈ مارننگ امریکہ‘ اور آن لائن رسالے ’سلیٹ‘ کے ساتھ اپنی ملاقات کے بارے میں بتانے کے حوالے سے بات چیت کر رہی تھیں۔

’سلیٹ گروپ‘ کے ایڈیٹر ان چیف جیکب ویزبرگ نے جمعہ کو کہا کہ اگست اور اکتوبر 2016 میں سٹیفنی کے ساتھ کئی انٹرویوز کیے جن میں انھوں نے بتایا کہ ان کی ٹرمپ کے ساتھ پہلی بار ملاقات سلیبرٹی گولف ٹورنامنٹ میں ہوئی تھی۔ اس ملاقات کے بعد ان کی ٹرمپ کے ساتھ افیئر بھی چلا۔

تصویر کے کاپی رائٹ Getty Images

جیکب کا کہنا ہے کہ ان انٹرویوز میں سٹیفنی نے کہا کہ مائیکل کوہن نے ان کو ایک لاکھ تیس ہزار ڈالر دینے کی پیشکش کی اگر وہ اس افیئر کے بارے میں بات نہ کریں۔

جیکب نے مزید بتایا کہ سٹیفنی نے کئی انٹرویوز کے بعد رابطہ ایک دم سے منقطع کر دیا۔

دوسری جانب اے بی سی ٹی وی نیٹ ورک کا کہنا ہے کہ مارننگ شو کے لیے سٹیفنی سے بات چیت چل رہی تھی لیکن سٹیفنی نے رابطہ منقطع کر دیا۔

تاہم مائیکل کوہن نے ایک بیان میں اس خبر کی تردید کی ہے۔ انھوں نے 10 جنوری کی تاریخ کا ایک بیان جاری کیا ہے جس پر سٹیفنی کے دستخط ہیں جس میں کہا گیا ہے کہ ڈونلڈ ٹرمپ کے ساتھ ملاقات صرف چند پارٹیوں کی حد تک تھی۔ بیان میں مزید کہا گیا ہے کہ ٹرمپ کے ساتھ افیئر کے حوالے سے خبریں بے بنیاد ہیں۔

وائٹ ہاؤس نے ایک بیان میں کہا ہے ’یہ پرانی خبریں ہیں جو پہلے شائع ہو چکی ہیں اور جن کی انتخاب سے قبل تردید کی جا چکی ہے۔‘

اسی بارے میں