افغانستان: بس حادثے میں پینتیس ہلاک

تصویر کے کاپی رائٹ BBC World Service
Image caption افغانستان میں سڑک کے حادثوں کا قصور اکثر خراب سڑکوں، نہ محفوظ گاڑیوں اور غیر ذمہ درانہ ڈرائونگ کو دیا جاتا ہے

جنوبی افغانستان میں ایک بس حادثے میں پینتیس افراد ہلاک اور کئی دیگر زخمی ہو گئے ہیں۔

افغانستان کے صوبہ قندھار میں حکام نے بتایا کہ حادثہ اس وقت پیش آیا جب قندھار سے دارالحکومت کابل جانے والی سڑک پر تیز رفتار بس ڈرائیور کے قابو میں نہ رہ سکی۔

افغانستان میں سڑک کے حادثے بہت عام ہیں اور ان کا قصور اکثر خراب سڑکوں، نہ محفوظ گاڑیوں اور غیر ذمہ درانہ ڈرائیونگ کو دیا جاتا ہے۔

حکام کے مطابق حادثہ سنیچر کو رات گئے قندھار شہر سے چالیس کلومیٹر کے فاصلے پر دامن کے علاقے میں ہوا۔

قندھار کے عوامی صحت کے سربراہ عبدالقیوم پوکھلا کا نے کہا ’آج صبح ہمیں پینتیس لاشیں ملیں جبکہ حادثے میں چوبیس افراد زخمی ہوئے ہیں۔‘

قندھار کے حکومتی ترجمان کا کہنا تھا کہ زخمی ہونے والوں میں سے زیادہ تر کی حالت تشویش ناک ہے۔

مقامی میڈیا سے ملنے والی اطلاعات کے مطابق صوبائی ٹریفک ڈپارٹمنٹ کے سربراہ محمداللہ نے حادثے کا قصور وار بس کے ڈرائیور کو ٹھہرایا ہے جو ان کے بقول تیز اور غیر ذمہ درانہ ڈرائیونگ کر رہا تھا۔

محمد اللہ کا کہنا تھا کہ تفتیش کے لیے ایک ٹیم کو جائے وقوع کی جانب روانہ کر دیا گیا ہے۔

اسی بارے میں