’ملازمتوں میں اضافے کا منصوبہ پیش‘

تصویر کے کاپی رائٹ bbc

امریکی صدر براک اوباما نے اراکین کانگریس پر زور دیا ہے کہ وہ ٹیکس کٹوتیوں اور مزید ملازمتیں پیدا کرنے کے لیے ان کے تجویز کردہ منصوبے کی حمایت کریں۔

کانگریس کے ایک مشترکہ اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے صدر اوباما نے کہا کہ امریکن جابز ایکٹ یا ملازمتوں کا قانون امریکہ کی گرتی ہوئی معیشت کو بہتر بنانے میں مددگار ثابت ہو گا۔

انھوں نے ڈیموکریٹس اور ریپبلکن کے اراکان پر زور دیتے ہوئے کہا کہ وہ فوری طور پر چار سو ارب ڈالر کے منصوبے کی منظوری دے دیں۔

حزب مخالف کی جماعت ریپبلکن کا کہنا ہے کہ صدر اوباما کی تجاویز ان کے دوبارہ صدارتی انتخاب لڑنے کے منصوبے کا حصہ ہیں۔

جمعرات کو اپنی تقریر میں صدر اوباما نے کہا ’میں اس کانگریس کو ایک منصوبہ ’امریکن جابز ایکٹ‘ دے رہا ہوں اور وہ اسے فوری طور پر منظور کر دے۔‘

انھوں نے اپنی تقریر میں کہا ’تجویز کردہ منصوبے کا مقصد سادہ سا ہے کہ مزید لوگوں کو کام پر واپس لایا جائے، جو کام کر رہے ہیں ان کی جیبوں میں مزید پیسے جائیں، اس سے تعمیراتی شعبے کے کارکنوں کے لیے روزگار کے مزید مواقع پیدا ہوں گے، سابق فوجیوں کے لیے مزید نوکریاں، اور لمبے عرصے سے بے روزگار افراد کے لیے مزید نوکریاں پیدا ہونگی۔‘

’نئی نوکریاں دینے والی کمپنیوں کے ٹیکس میں کمی ہو گی اور اس سے ہر کام کرنے والے امریکی اور چھوٹے کاروبار میں تنخواہوں پر ٹیکس میں نصف کمی ہو گی۔‘

صدر اوباما کے مطابق اس منصوبے کے تحت امریکہ میں ایک بہترین معیار کا ٹرانسپورٹ نظام قائم کیا جا سکے گا اور پینتیس ہزار سکولوں کی تعمیر اور ان کو جدید بنایا جا سکے گا۔

صدر اوباما نے کہا کہ وہ منصوبے کو بہتر بنانے کے لیے اپنے مخالفین کے ساتھ مل کر کام کرنے پر تیار ہیں لیکن انھوں نے خبردار کرتے ہوئے کہا کہ وہ اس بات کی اجازت نہیں دیں گے کہ ’موجودہ معاشی بحران کو جواز بنا کر امریکیوں کے بنیادی تحفظ کو ختم کر دیں جو وہ کئی عشروں سے دیکھ رہے ہیں۔‘

صدر اوباما چاہتے ہیں کہ آئندہ ہفتے یہ بل کانگریس میں منظوری کے لیے پیش کر دیں۔

اسی بارے میں