کابل سی آئی اے کے دفتر پر حملہ، دو ہلاک

افغان حکام کے مطابق دارالحکومت کابل کے ایک کمپاؤنڈ میں افغان ملازم کی فائرنگ سے ایک امریکی شہری ہلاک اور ایک زخمی ہو گیا ہے۔

یہ واقعہ اتوار کی رات پیش آیا اور حکام کے مطابق فائرنگ کے بعد حملہ آور کو ہلاک کر دیا گیا تاہم اس کمپاؤنڈ کے بارے میں کہا جا رہا ہے کہ یہ امریکی خفیہ ادارے سی آئی اے کا دفتر ہے۔

خیال رہے کہ دو ہفتے پہلے اسی علاقے میں واقع امریکی سفارت خانے اور نیٹو کے مرکزی دفتر پر شدت پسندوں نے حملہ کیا تھا اور بیس گھنٹے تک جاری رہنے والے اس حملے میں پچیس افراد ہلاک ہو گئے تھے۔

کابل حملہ: تمام شدت پسند ہلاک

کابل میں بی بی سی کے پال وڈ کا کہنا ہے کہ فی الوقت اس بات کی تصدیق نہیں کی جا سکتی کہ حملہ آور کا تعلق طالبان سے تھا یا پھر یہ فائرنگ کسی ذاتی جھگڑے کی بنیاد پر کی گئی تاہم ایک عینی شاہد کے مطابق حملہ آور چاروں طرف ’اندھا دھند‘ فائرنگ کر رہا تھا۔

اس سے قبل ایک امریکی اہلکار نے حملے کی تصدیق کرتے ہوئے کہا تھا کہ اس عمارت کو پہلے آریانا ہوٹل کے نام سے جانا جاتا تھا۔

افغان وزارتِ داخلہ کے ترجمان صدیق صدیقی نے فرانسیسی خبر رساں ادارے اے ایف پی کو بتایا کہ افغان سکیورٹی فورسز عمارت کے اندر نہیں جا سکتی ہیں کیونکہ یہاں اتحادی افواج تعینات ہیں۔

یہ کپماؤنڈ کابل کے محفوظ ترین علاقے میں واقع ہے اور اس کے نزدیک صدارتی محل، امریکی سفارت خانہ اور نیٹو کا فوجی اڈہ ہے۔

نیٹو اور امریکی سفارت خانے نے سرکاری طور پر ابھی تک اس واقعہ کی مذمت نہیں کی ہے۔

اسی بارے میں