یمن: بمباری سے فوجی ہلاک

Image caption یمنی فوج کی ایک سو انیسویں برگیڈ القاعدہ کے شدت پسندوں کے خلاف کارروائی میں شریک ہے۔

یمن کے جنوبی علاقے میں ایک جنگی جہاز کی بمباری میں کم سے کم بیس فوجی اہلکار ہلاک ہوگئے ہیں۔

مقامی اہلکاروں اور طبی کارکنوں نے ہلاکتوں کی تصدیق کی ہے تاہم یمن کے حکومت نے ان اطلاعات کو مسترد کیا ہے۔

سنیچر کے روز ایک سو انسویں بریگیڈ پر ہونے والی یہ بمباری زینجیبار کے قریب آبیان کے صوبے میں اس وقت کی گئی جب اس سے قبل وہاں شدت پسندوں نے حملہ کیا تھا۔

ابھی تک یہ واضح نہیں ہے کہ بمباری میں مجموعی طور پر کتنے فوجی اہلکار ہلاک ہوئے ہیں اور آیا یہ واقعے کسی غلطی کے تحت ہوا ہے۔

یمن کی وراتِ دفاع نے خبر رساں ادارے رائٹرز کو بتایا کہ کوئی فوجی ہلاک نہیں ہوا۔

اطلاعات کے مطابق ایک سو انیسویں بریگیڈ صدر صالح کے خلاف بغاوت کُچلنے کے لیے بلائی گئی ہے۔

اطلاعات کے مطابق القاعدہ سے تعلق رکھنے والے شدت پسندوں نے یمن میں مہینوں سے جاری مظاہروں کا فائدہ اٹھاتے ہوئے زیجنیبار میں داخل ہونے کی کوشش کی۔

یمن میں حزبِ مخالف کا کہنا ہے کہ حکومت نے القاعدہ سے خطرے کو استعمال کرتے ہوئے اپنی کارروائیوں کے لیے بین القوامی حمایت حاصل کرنے کی کوشش کی ہے۔

اسی بارے میں