شام میں بات شروع کی جائے: عرب لیگ

تصویر کے کاپی رائٹ Reuters

عرب لیگ نے شام کی حکومت اور اپوزیشن پر زور دیا ہے کہ ملک میں بدامنی کےخاتمے کے لیے دونوں فریق پندرہ روز کے اندر بات چیت کا آغاز کریں۔

البتہ عرب کی وزرائے خارجہ کی کانفرنس میں شام کی رکنیت کوختم کرنے کی تجویز سے اتفاق نہیں کیا گیا۔

قاہرہ میں ہونے والی ہنگامی کانفرنس عرب وزارئے خارجہ نے حکومت اور اپوزیشن دونوں پر زور دیا کہ ملک میں جاری پرتشدد کاررائیوں پر قابو پانے کے لیےقومی ڈائیلاگ کو پندرہ روز میں شروع کیا جائے۔

شام کی حکومت نے مصر میں ہونے والے مجوزہ مذاکرت کے حوالے سے خدشات کا اظہار کیا ہے۔

اقوام متحدہ کا کہنا ہےکہ گزشتہ کئی ماہ سے جاری احتجاج میں ابھی تک تین ہزار سے زیادہ افراد ہلاک ہو چکے ہیں۔ شام کی حکومت کا موقف ہے کہ بیرونی طاقتوں کی ایما پر چلنے والی اس مسلح شورش میں گیارہ سو فوجی ہلاک ہوچکے ہیں۔

گزشتہ ہفتے روس نے امریکہ اور یورپ کی طرف سے اقوام متحدہ میں شام کے خلاف قرارداد کو ویٹو کردیا تھا۔ روس نے البتہ واضح کیا تھا کہ شام کی حکومت کو اپنی اپوزیشن سے بات چیت کرنی ہوگی۔

اسی بارے میں