افغانستان: عید پر خودکش حملہ سات افراد ہلاک

افغانستان میں خودکش حملہ تصویر کے کاپی رائٹ BBC World Service
Image caption حکام کے مطابق ہلاک ہونے والوں میں ایک پولیس اہلکار بھی شامل ہے۔

افغانستان کے شمالی صوبے بغلان میں حکام کے مطابق ایک مسجد کے قریب ہوئے خود کش دھماکے میں کم از کم سات افراد ہلاک ہو گئے ہیں۔

یہ دھماکہ آج بروز اتوار صبح نو بجے ہوا جب لوگ عیدالاضحٰی کی نماز کے بعد مسجد سے نکل رہے تھے۔ حکام کے مطابق حملے میں بارہ افراد زخمی ہوئے ہیں اور ہلاک ہونے والوں میں ایک پولیس اہلکار بھی شامل ہے۔

فرانسیسی خبر رساں ادارے اے ایف پی کے مطابق افغان وزراتِ داخلہ کے ترجمان سہیب صدیقی نے بتایا کہ ایک دوسرے خود کش بمبار کو گرفتار کر لیا گیا ہے۔

سہیب صدیقی کا کہنا تھا کہ ابھی تک کسی نے اس دھماکے کی ذمہ داری نہیں قبول کی لیکن ابتدائی تحقیقات سے ایسا لگ رہا ہے کہ اس میں طالبان کا ہاتھ ہو سکتا ہے۔

انھوں نے مزید کہا کہ دوسرے خود کش بمبار کو حملہ کرنے سے پہلے ہی گرفتار کر لیا گیا۔

واضح رہے کہ افغانستان کے صوبہ بغلان کو ایک پرامن علاقہ مانا جاتا تھا لیکن سنہ دو ہزار دس سے یہاں تشدد کے واقعات میں تیزی سے اضافہ دیکھنے میں آیا ہے۔

اقوامِ متحدہ کے مطابق سنہ دو ہزار ایک میں شروع ہونے والی جنگ کے بعد سے رواں سال کے پہلے چھ ماہ افغانستان کے شہریوں کے لیے سب سے زیادہ جان لیوہ ثابت ہوئے ہیں۔

اسی بارے میں