’عالمی معیشت کے دس سال ضائع‘

یورو تصویر کے کاپی رائٹ 1
Image caption خدشہ ظاہر کیا جا رہا قرضوں کا بحران یورو زون کی بڑی معیشتوں تک پھیل رہا ہے۔

عالمی مالیاتی ادارے کرسٹین لیگارڈ نے خبردار کیا ہے کہ عالمی معیشت ایک پوری دہائی کے زیاں کے قریب ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ یورپ میں جاری قرضوں کے بحران نے عالمی معیشیت کی غیر یقینی صورتحال سے دوچار کر دیا ہے۔

آئی ایم کی قیف نے مزید کہا کہ حالانکہ بحران کے حل کے لیے کی جانے والی کوششیس صحیح سمت میں کی جا رہی ہیں تاہم اعتماد کی بحالی کے لیے مزید اقدامات کی ضرورت ہے۔

عالمی مالیاتی ادارے کی سربراہ اس وقت چین میں ہیں جہاں انہوں نے معشیت کو سہارا دینے کے لیے چین سے مدد طلب کی ہے۔

ان کا کہنا تھا ’ہم محسوس کرتے ہیں کہ اگر ہم نے نڈر ہوکر کام نہ کیا اور مل کر اقدامات نہ کیے تو دنیا بھر میں معیشت کے غیر یقینی صورتحال اور معاشی عدم استحکام کے باعث زوال کا شکار ہونے کا خطرہ ہے۔‘

’ہمیں خطرہ ہے، جیسا کہ بعض مبصرین پہلے ہی کہہ رہے ہیں کہ ہم نے ایک دہائی کھو دی ہے۔‘

کرسٹین لیگارڈ کا یہ بیان ایسے وقت میں آیا ہے جب یہ خدشہ ظاہر کیا جا رہا ہے کہ یورو زون قرضوں کا بحران خطے کی بعض بڑی معیشتوں تک پھیل رہا ہے۔

منگل کے روز اٹلی کا قرض چھ اعشاریہ سات فیصد پر پہنچ گیا جو انیس سو ننانوے میں یورو کی تشکیل کے بعد قرض کی بلند ترین سطح ہے۔

خدشہ ظاہر کیا جا رہا ہے یورو زون کا قرضوں کا بحران بین القوامی معیشت پر بہت زیادہ اثر ڈالے گا۔

اسی بارے میں