عراق: پانچ دھماکوں میں پندرہ ہلاک

تصویر کے کاپی رائٹ Reuters
Image caption عراق میں شدت پسندوں کی جانب سے حملوں کا سلسلہ جاری ہے

عراق میں حکام کے مطابق دارالحکومت بغداد میں ہونے والے بم پانچ بم دھماکوں میں پندرہ افراد ہلاک اور بیس سے زیادہ زخمی ہو گئے ہیں۔

حکام کے مطابق سنیچر کو بغداد کے تجارتی علاقے باب الاشرقی میں تین دھماکوں میں آٹھ افراد افراد ہلاک ہوئے جبکہ سات افراد اس وقت مارے گئے جب بغداد اور فلوجہ کے درمیان تعمیراتی کارکنوں کو لے جانے والا ٹرک سڑک کنارے نصب دو بموں کی زد میں آ گیا۔

عراق میں اگرچہ حالیہ برسوں میں تشد کی کارروائیوں میں کمی آئی ہے تاہم شدت پسندوں کی جانب سے حملوں کا سلسلہ جاری ہے۔

باب الاشرقی میں موجود ایک خوانچہ فروش نے خبر رساں ادارے اے ایف پی کو بتایا کہ ان دھماکوں میں گاہکوں کو چائے دینے والی ایک خاتون کی ٹانگ ضائع ہو گئی۔

دوسری جانب ڈاکٹر عمر ڈلی نے اے ایف پی کو بتایا کہ فلوجہ کے ہسپتال میں سات افراد کی لاشیں لائی گئیں جو ٹرک دھماکے میں ہلاک ہوئے۔

واضح رہے کہ عراق میں سنہ دو ہزار چھ، سات کے بعد پرتشدد کارروائیوں میں کمی آئی ہے تاہم سنہ دو ہزار گیارہ کے آخر میں امریکی افواج کی عراق سے انخلاء کے بعد سکیورٹی صورتِ حال پر تشویش پائی جاتی ہے۔

عراق میں موجود آخری امریکی افواج رواں سال کے آخر تک واپس چلے جائیں گے۔

اسی بارے میں