میکسیکو: جوکوئین گزمین مطلوب ترین شخص

تصویر کے کاپی رائٹ AP
Image caption جوکوئین گزمین کو سنہ انیس سو ترانوے میں جیل بھیج دیا گیا تاہم وہ آٹھ سال بعد فرار ہونے میں کامیاب ہو گئے

القاعدہ کے سابق سربراہ اسامہ بن لادن کی پاکستان میں امریکی افواج کے ہاتھوں ہلاکت کے بعد ’دنیا کے مطلوب ترین شخص‘ کا ٹائٹل میکسیکو سے تعلق رکھنے والے شخص جوکوئین گزمین کو دے دیا گیا ہے۔

گزمین میکسیکو میں سینالاؤ نامی منشیات کے گروہ کے سرغنہ ہیں جن کے بارے میں کہا جاتا ہے کہ یہ مغربی ہیمشائر میں منشیات کا طاقتور ترین گروہ ہے۔

سینالاؤ گروہ دنیا میں کوکین، بھنگ، چرس اور دیگر منشیات کو امریکہ میں جہاز، زمین اور سمندر کے ذریعے کنٹرول کرتا ہے اور اس کے بارے میں کہا جاتا ہے کہ اس کے پچاس ممالک کے ساتھ رابطے ہیں۔

شارٹی کہے جانے والے جوکوئین گزمین کو سنہ انیس سو ترانوے میں جیل بھیج دیا گیا تاہم وہ آٹھ سال بعد فرار ہونے میں کامیاب ہو گئے۔

واضح رہے کہ امریکی سٹیٹ ڈیپارٹمنٹ نے جوکوئین گزمین کی گرفتاری کی اطلاع دینے والے کے لیے پانچ ملین ڈالرز کا انعام مقرر کیا ہے۔

دوسری جانب میکسیکو کی حکومت نے بھی پچاس سالہ گزمین کی زندہ یا مردہ گرفتاری پر انعام مقرر کر رکھا ہے۔

گزمین کے اہم ساتھیوں اور سپاہیوں کو بھی گرفتار کیا جا چکا ہے جن میں ان کی سکیورٹی کے سربراہ فلپ کیبرا المعروف انجنیئر شامل ہیں۔

امریکہ کے مشہور اخبار دی واشنگٹن پوسٹ میں گزشتہ سال اکتوبر میں شائع ہونے والے ایک آرٹیکل میں بتایا گیا ہے کہ میکسیکو کی حکومت نے گزمین کی زندہ یا مردہ گرفتاری کے لیے آرمی، نیوی اور وفاقی پولیس پر مشتمل تین ٹیمیں تشکیل دی ہیں۔

میکسیکو میں برسرِ اقتدار قومی ایکشن جماعت رواں برس جولائی میں ہونے والے عام انتخابات سے پہلے گزمین کی گرفتاری کے لیے کوشاں ہے۔

اگر میکسیکو کی حکومت انہیں گرفتار کرنے میں کامیاب ہو جاتی ہے تو یہ اوبامہ انتظامیہ کے لیے بھی بہت اہم گرفتاری ہو گی کیونکہ امریکہ میں رواں سال ہونے والے عام انتخابات میں میکسیکو کی سرحد کے ساتھ واقع امریکی ریاستوں کیلیفورنیا، ٹیکساس اور ایریزونا میں سرحدی سکیورٹی کا مسئلہ بہت اہم ہوگا۔

اسی بارے میں