سوئٹزرلینڈ میں بس حادثہ، 28 افراد ہلاک

تصویر کے کاپی رائٹ AP
Image caption یہ بس بچوں کو لے کر بیلجیئم جارہی تھی اور ایک سرنگ میں دیوار سے ٹکرا گئی

سوئٹزرلینڈ میں پولیس کا کہنا ہے کہ بیلجیئم جانے والی ایک بس کے ایک حادثے میں بائیس بچوں سمیت اٹھائیس افراد ہلاک ہوگئے ہیں۔

یہ حادثہ اٹلی کی سرحد کے قریب ویلیس میں پیش آیا جس میں چوبیس بچے زخمی بھی ہیں۔

یہ بس ایک سرنگ میں دیوار سے ٹکرا گئی جس میں اس کے دونوں ڈرائیور بھی ہلاک ہوگئے۔

اس بس میں باون افراد سوار تھے جن میں زیادہ تر بچے تھے جو سکیئنگ کے بعد اپنے گھروں کو واپس جا رہے تھے۔

بیلجیئم کے وزیراعظم ایلیو ڈی روپو نے جائے حادثہ کا دورہ کیا اور کہا ’یہ بیلجیئم کے تمام لوگوں کے لیے ایک اندوہناک دن ہے۔‘

برسلز میں بیلجیئم کی وزارتِ خارجہ کا کہنا ہے کہ زیادہ تر بچوں کی عمریں بارہ سال کے لگ بھگ تھیں اور متاثرہ بس ان تین بسوں میں سے ایک تھی جنہیں ایک کرسچیئن گروپ نے کرائے پر حاصل کیا تھا۔ دیگر دو بسیں بیلجیئم پہنچ چکی ہیں۔

حادثے میں زخمی ہونے والوں میں سے چند شدید زخمیوں کو ہیلی کاپٹروں کے ذریعے برن، لاسین اور دیگر شہروں کے ہسپتال منتقل کیا گیا۔

سوئٹزرلینڈ کے پراسیکیوٹر اولیور ایلسِگ نے نیوز کانفرنس میں بتایا کہ بس نئی تھی یا تقریباً نئی تھی اور وہ حفاظتی بیلٹوں سے لیس تھی۔

انہوں نے کہا کہ سرنگ میں جہاں حدِ رفتار ایک سو کلومیٹر فی گھنٹہ تھی وہاں یہ بس پہلے اپنی دائیں جانب کی دیوار سے ٹکرائی اور پھر سیمنٹ سے بنی دیوار سے آمنے سامنے سے ٹکرائی۔ اس سلسلے میں تحقیقات شروع کردی گئی ہیں۔

بس کے حادثے کے بعد امدادی کارروائیوں میں آٹھ ہیلی کاپٹروں کے علاوہ دو سو افراد نے حصہ لیا۔

اسی بارے میں