کابل: ایف ایم ریڈیو سٹیشنوں کا شہر

Image caption افغانستان میں کابل سے نشریات کرنے والے ایک ایف ایم ریڈیو کا میزبان

پچھلے چند برسوں کے دوران افغانستان میں ایف ایم ریڈیو سٹیشنوں کی تعداد اور مقبولیت میں تیز تر اضافہ دیکھنے میں آیا ہے۔ افغانستان کے وزارت اطلاعات و نشریات کا کہنا ہے کہ دنیا کے دوسرے ممالک کی نسبت، اس ملک میں سب سے زیادہ ریڈیو سٹیشن قائم ہوئے ہیں۔

فی الحال، پورے افغانستان میں 150 ایف ایم ریڈیو سٹیشن روزانہ مختلف پروگرام پیش کرتے ہیں۔ شاید اسی لیے افغانستان کے دارالحکومت کابل کو ایف ایم ریڈیو کا شہر کہا جاتا ہے کیوں کہ صرف ایک کابل شہر ہی میں تریسٹھ ایف ایم ریڈیو سٹیشن ہیں۔

کابل میں جب ان ریڈیو سٹیشنوں کی نشریات سنی جاتی ہیں تو دنیا کے دوسرے شہروں کی طرح ایک زندہ شہر میں ہونے کا احساس ہوتا ہے۔

نوجوان نسل، خاص طور پر لڑکیاں ایف ایم ریڈیو سٹیشنوں کو چلانے میں سب سے آگے ہیں۔

شمالی صوبہ قندوز میں پانچ ایف ریڈیو سٹیشن ہیں اور سب کی ایڈیٹر یا مدیر تعلیم یافتہ خواتین ہیں۔

ان ریڈیو سٹیشنوں کے موضوعات میں روشن خیالی سے لے کر شاعرانہ بحث و مباحثہ تک سبھی کچھ روزانہ کے پروگراموں کا معمول بن چکا ہے۔

خواتین اور لڑکیاں ان ریڈیو سٹیشنوں سے اپنی محسوسات بیان کرتی ہیں، موسیقی سنتی ہیں اور ایسی باتوں کو زیر بحث لاتی ہیں جو عام طور پر کی نہیں جا سکتیں اور شاید اس طرح یہ خواتین اور لڑکیاں تشدد سے دوری اختیار کر نے کی کوشش کرتی ہیں۔

دوسرے متعدد مشرقی ممالک کی طرح افغانستان میں بھی لوگوں میں نئے مغربی نظریات اور پرانی و روایتی عادات و اطوار کی پاسداری جیسے موضوعات پر اختلافِ نظر موجود ہے۔

یہاں کچھ لوگ نئے نظریات اور جدید موسیقی کی حامی ہیں تو ساتھ ہی ان افراد کی بھی کمی نہیں جو روایتی اور اور لوک موسیقی کو زندہ رکھنے کی کو کوششوں میں سرگرداں دکھائی دیتے ہیں۔ یہاں تک کہ چند ایف ایم ریڈیو سٹیشنوں نے اپنے نام ہی فوک گلوکاروں کے نام پر رکھے ہیں۔

کچھ ایسے ریڈیو بھی ہیں جو چوبیس گھنٹے ایک ہی گلوکار کے گانے نشر کرتے ہے۔ تاہم کچھ لوگ اس صورتِ حال کو دو نسلوں کی جنگ یا جنریشن گیپ اور سلیقوں کا اختلاف نظر سمجھتے ہیں۔

افغانستان کے ایف ایم ریڈیو سٹیشنوں پر برصغیر کی موسیقی کے رنگ و بو کا اپنا ایک مقام ہے۔ شام غزل کی نشستوں میں پاکستانی اور انڈین غزل گائیکوں کی آوازیں ایک ساتھ، اگے پیچھے سنائی دیتی ہیں۔

جہاں تک بم دھماکوں، بد امنی، خوف و ہراس اور افغانستان میں مقیم غیر ملکی فوجیوں کی نا پسندیدہ سرگرمیوں جیسے مسائل کا تعلق ہے تو یہ ایف ایم ریڈیو سٹیشن ان موضوعات اور افغان سیاست کو بھی خآطر خواہ وقت دیتے ہیں۔

افغانستان میں ریڈیو سامعین ہر علاقے کے اعتبار سے ذوق رکھتے ہیں شاید یہی وجہ ہے کہ ہر شہر کے ایف ایم ریڈیو کی اپنی الگ الگ رنگ اور پالیسی ہے۔

اس ملک میں ایف ایم ریڈیو کی مقبولیت اس حد تک پہنچ گئی ہے کہ کچھ لوگ ڈیجیٹل ریڈیو لانچ کرنے کے بارے میں بھی سوچ رہے ہیں۔

اسی بارے میں