شمالی کوریا:راکٹ تجربے سے پہلے اہم اجلاس

تصویر کے کاپی رائٹ AP
Image caption امریکہ اور شمالی کوریا کے ہمسایہ ممالک کا اصرار ہے کہ یہ ایک طویل فاصلے پر مارک کرنے والے مزائل کا تجربہ ہوگا۔

شمالی کوریا میں راکٹ کے متوقع تجربے سے پہلے ایک اعلٰی سطحی اجلاس کا انعقاد کیا جائے گا۔ اس اجلاس میں کم جونگ این کے مکمل طور اقتدار سنبھالنے کی اہم تقریبات بھی ہو سکتی ہیں۔

ریاستی ذرائع ابلاغ کے مطابق ورکرز پارٹی کی جانب سے بلائے گئے اس اجلاس کو گیارہ اپریل کو دارلحکومت پیونگ یانگ میں منعقد کیا جا رہا ہے۔

اطلاعات کے مطابق کم جونگ این کو چند ایسے عہدوں پر فائز کیا جا سکتا ہے جو کہ ان کے مرحوم والد کم جونگ اِل کے پاس تھے۔

شمالی کوریا بارہ اور سولہ اپریل کے درمیان راکٹ کے ذریعے اپنی سیٹلائٹ کو خلاء میں بھیجے گا۔

شمالی کوریا کا کہنا ہے کہ یہ سیٹلائٹ پرامن مقاصد کے لیے اور شمالی کوریا کے بانی کم اِل سنگ کی سویں سالگرہ کے موقع پر مدار میں بھیجی جا رہی ہے۔

تاہم بین الاقوامی سطح پر اس اقدام کی تنقید کی گئی ہے۔ امریکہ اور شمالی کوریا کے ہمسایہ ممالک کا اصرار ہے کہ یہ اقوام متحدہ کی پابندیوں کے منافی ایک طویل فاصلے تک مار کرنے والے میزائل کا تجربہ ہوگا۔

پیر کے روز ریاستی میڈیا نے اعلان کیا تھا کہ کم جونگ این نے اپنے والد کی وفات کے بعد ملک کی قیادت سنبھال لی ہے اور اس اجلاس میں شرکت کے لیے منتخب ہو گئے ہیں۔

تیرہ اپریل کو پارلیمانی اجلاس بھی متوقع ہے جو کہ کم جونگ اِل کی وفات کے بعد پہلا پارلیمانی اجلاس ہوگا۔

دوسری جانب شمالی کوریا اور اس کے ہمسایہ ممالک کے بیچ اس راکٹ لانچ کو لے کر شدید تناؤ جاری ہے۔

امریکی نائب وزیرِ خارجہ کرٹ کیمبل کا کہنا ہے کہ راکٹ ممکنہ طور پر آسٹریلیا، انڈونیشیا اور فلپائن کے اوپر سے گزرے گا۔

اتوار کے روز شمالی کوریا کے قریب ترین اتحادی ملک چین میں ’آسیان‘ کے اجلاس کے موقع پر فلپائن نے شمالی کوریا کے اقوام متحدہ میں سفیر کے سامنے اعتراضات پیش کیے تھے۔

اسی بارے میں