اٹلی کے شمال میں زلزلہ، چار افراد ہلاک

اٹلی میں زلزلے سے متاثر عمارت کی تصویر تصویر کے کاپی رائٹ Reuters
Image caption زلزلہ آدھی رات کو آیا ہے

اٹلی کے شمال میں آنے والے زلزلے میں کم سے کم چار افراد ہلاک ہو گئے ہیں۔

زلزلہ آدھی رات کو آیا اور اس کی شدت ریکٹر سکیل پر چھ بتائی گئی ہے۔ زلزلے کے خوف سے ہزاروں لوگ بھاگ کر سڑکوں پر آ گئے۔

حکام کے مطابق ہلاک ہونے والے افراد منہدم ہونے والی ایک عمارت کے نیچے آگئے۔ وہ وہاں کام کر رہے تھے۔

زلزلے میں کئی فیکٹریوں اور عمارتوں کو نقصان پہنچا ہے۔ زلزلے کے بعد آفٹر شاکس کا سلسلہ جاری ہے۔

امدادی ٹیمیں ملبے تلے دب جانے والے افراد کی تلاش کر رہی ہیں۔

اٹلی کے سرکاری ٹی وی پر زلزلے میں تباہ ہوجانے والی فیکٹری اور ٹوٹے ہوئے گرجا گھروں کو دکھایا گيا ہے۔

امدادای ٹیم امدادی کام میں لگے ہیں اور خدشہ ظاہر کیا جارہا ہے کہ ملبے کے نیچے مزید افراد دبے ہوسکتے ہیں۔

زلزلہ کی شدت اٹلی کے شمالی شہروں جیسے بولوگنا، فریرا، ویرونا اور منتوا میں محسوس کی گئی ہے۔

زلزلے کی وجہ سے تین افراد سینٹ اگستینو شہر میں ایک فیکٹری میں کام کرتے ہوئے ہلاک ہوگئے جبکہ ایک اور شخص جو ہلاک ہوا ہے وہ پونتے روڈونی دے بینڈنو علاقے میں تھا۔

رپورٹس کے مطابق پچاس افراد زخمی ہوئے ہیں۔

اٹلی کی انسا نیوز ایجنسی نے ایک مقامی شہری کے حوالے سے بتایا ہے ' میں نے ایک زبردست آواز سنی اور میں چھت پر بھاگ گیا۔ مجھے گرنے کا ڈر لگ رہا تھا'۔

ٹی وی پر زلزلے کی بعد کی جو تصاویر دکھائی گئی ہیں ان میں لوگ عمارتوں، دفاتر اور تاریخی عمارتوں کو ہوئے نقصان کا جائزہ لے رہے ہیں۔ ایک علاقے میں ایک تاریخي قلعہ کا ایک حصہ ٹوٹ گیا ہے ۔

اٹلی میں بی بی سی کے نامہ نگار ایلن جونسٹن کا کہنا ہے کہ اٹلی کے شمال میں چھوٹے موٹے زلزلے آتے رہتے ہیں لیکن زلزلے سے نمٹنے کے معقول انتظامات وہاں کیے گئے ہیں۔

اسی بارے میں