افعانستان، القاعدہ کے اہم رہنما ہلاک: نیٹو

تصویر کے کاپی رائٹ NA

افغانستان میں تعینات نیٹو افواج نے دعویٰ کیا ہے کہ اتوار کی شب کو ایک فضائی کارروائی میں القاعدہ کے ایک اہم رہنما ہلاک ہو گئے ہیں۔

دریں اثناء طالبان کے ذرائع نے القاعدہ رہنما کی ہلاکت کی تردید کی ہے۔

نیٹو کی جانب سے جاری ہونے والے ایک بیان کے مطابق ہلاک ہونے والے القاعدہ رہنما کا نام شاکر الطیفی ہے اور وہ افغانستان میں القاعدہ کے دوسرے اہم رہنما تھے۔

شاکر الطیفی کا تعلق سعودی عرب سے تھا۔

نیٹو کی جانب سے جاری کردہ بیان میں کہا گیا ہے کہ شاکر الطیفی کو کنٹر صوبہ کے واطہ پور ضلع میں ایک فضائی کارروائی کے ذریعے ہلاک کیا گیا۔ اسی کارروائی میں طالبان کے ایک اور اہم رہنماء بھی ہلاک ہوئے۔

نیٹو کے بیان کے مطابق وہ افغانستان میں غیر ملکی جنگجووں کے کمانڈر تھے اور ان کے ذمے اتحادی اور افغان فورسز پر حملے کرنا تھا۔

دوسری جانب صوبہ کنٹر میں طالبان نے ان کی ہلاکت کی تردید کرتے ہوئے کہا ہے وہ تقریباً تین ماہ پہلے علاقہ چھوڑ کر جا چکے تھے۔

شاکر الطیفی مشتاق یا ناسم کے ناموں سے بھی جانے جاتے تھے۔

نیٹو کا کہنا ہے کہ ان کے ذمے ہتھیاروں اور جنگجووں کو افغانستان میں لانا بھی تھا۔

اسی بارے میں