’سپین کی مالی امداد یورو کی فتح ہے‘

تصویر کے کاپی رائٹ AFP
Image caption ہسپانوی وزیرِاعظم نے یوروزون کے اقدام کا خیر مقدم کیا۔

ہسپانوی وزیرِ اعظم ماریانو راہوئے نے یوروزون کے وزرائے خزانہ کی جانب سے سپین کو بینکاری سیکٹر کی مشکلات سے نمٹے کی لیے امداد دینے کے فیصلے کا خیر مقدم کرتے ہوئے اس اقدام کو یورو کرنسی کے لیے ایک فتح قرار دیا۔

سنیچر کو یوروزون کے وزراء نے سپین کو ایک سو ارب یورو دینے کی منظوری دے دی تھی۔

سپین کے بینک قرضہ جات واپس نہ ملنے کی وجہ سے معاشی بحران کا شکار ہیں۔

امریکہ اور بین الاقوامی مالیاتی ادارے آئی ایم ایف نے بھی اس اقدام کا خیر مقدم کیا۔

میڈرڈ میں صحافیوں سے باتیں کرتے ہوئے وزیرِ اعظم کا کہنا تھا کہ ان کی حکومت کی کوششوں کی وجہ سے سپین میں وسیع تر ریاستی پیمانے پر امداد کی ضرورت نہیں پڑی۔

انہوں نے کہا کہ یورپی ممالک کی جانب سے امداد کی وجہ سے عوام اور چھوٹے تاجروں کو قرضوں کی فراہمی بہتر ہو جائے گی۔

تاہم انہوں نے خبردار کیا کہ یہ سال معاشی لحاظ سے مشکل رہے گا اور متوقع ہے کہ سپین کی معیشت کا حجم ایک اشاریہ سات فیصد کی شرح سے کم ہو۔

مجوزہ امدادی منصوبے کا مقصد سپین کے معاشی بحران سے دوچار بینکوں کو دیوالیہ سے بچانا ہے جو کہ گزشتہ چند سالوں میں واقع ہونے والے عالمی معاشی بحران کے ساتھ ساتھ شدید مشکلات میں ہیں۔

سپین کو ملنے والی اصل امدادی رقم کا تعین ہسپانوی بینکوں کی جانچ پڑتال کے بعد کیا جائے گا۔ سپین کے وزیر برائے اقتصادی امور لوئی دی گوئندوز کا کہنا ہے کہ بینکوں کی رپورٹ چند روز میں تیار ہوجائے گی۔

حال ہی میں سپین کے لیے قرضاجات کی قیمت میں نجی ذرائع کی جانب سے اضافے کے بعد سپین کی حکومت کے لیے بینکاری کے شعبے کو ڈوبنے سے بچانا مشکل ہوگیا تھا۔

اسی بارے میں