بچہ بغیر ٹکٹ، پاسپورٹ روم کی پرواز پر

تصویر کے کاپی رائٹ Adrian Pingstone

برطانیہ کے شہر مانچسٹر میں ایک گیارہ سالہ بچہ روم کی فلائٹ میں بغیر ٹکٹ، بغیر بورڈنگ پاس اور پاسپورٹ کے سوار ہو گیا۔

مانچسٹر کے ہوائی اڈے کے حکام کے مطابق یہ بچہ منگل کی دوپہر کو مختلف خاندانوں کے ساتھ مل کر ٹرمینل نمبر ایک پار کر گیا۔

اس بچے کے بارے میں اُس وقت پتہ چلا جب جہاز پرواز کر گیا اور مسافروں کو یہ تشویش ہوئی کہ یہ بچہ کس کا ہے۔

مانچسٹر ایئر پورٹ کے ترجمان کا کہنا ہے کہ فرائض سے غفلت برتنے کی وجہ سے ایئر لائن کے متعدد ملازمین کو معطل کر دیا گیا ہے۔

ترجمان کے مطابق بچہ مختلف سکیورٹی چیکس سے گزرا۔ تاہم بچے سے کسی قسم کے کاغذات کے بارے میں نہیں پوچھا گیا۔

ترجمان کا کہنا تھا کہ اس واقعہ سے ظاہر ہوتا ہے بچے کے کاغذات کو سکیورٹی پوائنٹ اور بورڈنگ گیٹ پر صحیح طرح چیک نہیں کیا گیا۔

دوسری جانب ٹرانسپورٹ سیکرٹری جسٹن گریننگ کا کہنا ہے کہ یہ بہت تشویناک صورتحال ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ یہ واقعہ سکیورٹی کی کوتاہی ہے اور ہم مانچسٹر ایئر پورٹ کے ساتھ مسلسل رابطے میں ہیں اور اصل صورتحال جاننے کی کوشش کر رہے ہیں۔

دریں اثناء جیٹ ایئر لائن کے ترجمان کا کہنا ہے کہ منگل کی دوپہر ایک گیارہ سالہ بچہ مانچسٹر ایئر پورٹ سے ضروری دستاویزات کے بغیر سکیورٹی کلیئر کر گیا۔

ترجمان کے مطابق بچہ روم کی فلائیٹ میں سوار ہو گیا۔

ترجمان کا مزید کہنا تھا کہ اس واقعہ کی جامع تحقیقات شروع کر دیں ہیں اور کچھ سٹاف کو معطل بھی کر دیا گیا ہے۔

بتایا جاتا ہے کہ گیارہ سالہ بچہ گھر سے بھاگا ہوا ہے اور اسے اس کے خاندان تک پہنچایا جا رہا ہے۔

اسی بارے میں