یمن: اطالوی سیکورٹی اہلکار اغواء

تصویر کے کاپی رائٹ AFP
Image caption حکام اکثر ان واقعات کی ذمہ داری القاعدہ سے منسلک قبائلی اور مسلح گروہوں پر عائد کرتے ہیں

حکام کے مطابق یمن کے دارالحکومت ثناء میں اطالوی سفارتخانے کے ایک سیکورٹی اہلکار کو اغواء کر لیا گیا ہے۔

سفارتی ذرائع کا کہنا تھا کہ اس اطالوی شخص کو جنوب مغربی ثناء میں اٹلی کے سفارتخانے کے قریب سے اغواء کیا گیا۔

پولیس اغوا کاروں کا پتا لگانے کی کوشش کر رہی ہے۔ اٹلی کی وزارتِ خارجہ نے خبر رساں ایجنسی اے پی کو اس واقعے کی تصدیق کر دی ہے۔

یمن میں غیر ملکیوں کے اغواء کے واقعات عام ہیں اور یہ معاملات عموماً پر امن طریقے سے حل ہو جاتے ہیں۔

اغواء کے واقعات کی اکثریت میں مغوی افراد کو یمنی حکومت سے اپنیے مطالبات منوانے کے لیے استعمال کیا جاتا ہے۔

حکام اکثر ان واقعات کی ذمہ داری القاعدہ سے منسلک قبائلی اور مسلح گروہوں پر عائد کرتے ہیں۔

ہلالِ احمر کے لیے کام کرنے والے ایک فرانسیسی مغوی اہلکار کو اس ماہ کے آغاز میں رہا کیا گیا تھا۔ انہیں اپریل میں اغواء کیا گیا تھا۔

مارچ میں اغواء ہونے والی ایک اور سوئس خاتون کی بازیابی ابھی تک عمل میں نہیں آسکی ہے۔

اسی بارے میں