مصر: فوجی سربراہ وزیر رہیں گے

ہشام قندیل تصویر کے کاپی رائٹ Reuters
Image caption مصر کے نامزد وزیر اعظم ہشام قندیل

مصر کے فوجی سربراہ فیلڈ مارشل حسین تنتاوی نئی کابینہ میں وزیر دفاع کے عہدے پر قائم رہیں گے۔

اس بات کی تصدیق مصر کے نامزد وزیر اعظم ہشام قندیل نے کی ہے۔ پچھلے ماہ ملک کے صدر کا عہدہ سنبھالنے والے محمد مرسی نئی کابینہ سے حلف لیں گے۔

صدر مرسی کا تعلق اخوان المسلمین سے ہے لیکن انہوں نے کہا تھا کہ نئی کابینہ میں مصر کے تمام اقلیتی گروپوں کے نمائندوں کو شامل کیا جائے گا۔

مصر کے خبر رساں ادارے المناء کے مطابق نامزد وزیر اعظم نے ایک پریس کانفرنس میں نئی کابینہ کی تفصیل بیان کی۔

وزیر دفاع کے علاوہ وزیر خارجہ اور وزیر خزانہ کو بھی تبدیل نہیں کیا جائے گا۔ یہ تینوں افراد ملک کے سپریم کونسل آف دی آرمڈ فورس یعنی افواج کی سپریم کونسل میں وزیر تھے۔’

اس کونسل نے نومبر 2011 میں معزول صدر حسنی مبارک کے خلاف احتجاجی مہم کے بعد اقتدار سنبھال لیا تھا اور پھر پارلیمان کو تحلیل کر دیا تھا جو کہ ایک بہت متنازع فیصلہ تھا۔

ان تین وزراء کے علاوہ سپریم کونسل کے معاون وزیر داخلہ میجر جنرل احمد جمال الدین سے گزارش کی گئی ہے کہ وہ وزیر داخلہ کا عہدہ سنبھال لیں۔ نئی کابینہ کے اٹھارہ وزراء میں سے دو کا تعلق اخوان المسلمین سے ہے۔

مصطفی مساد تعلیم کی وزارت سنبھالیں گے جبکہ طارق وافق ہاؤسنگ کے وزیر ہوں گے۔

نئے وزیر اطلاعات صلاح عبدالمقصود ہوں گے جبکہ وفاق کی وزارت الاظہر یونیورسٹی کے صدر اسامہ العبد کو دی گئی ہے۔

نئے وزیر اعظم ہشام قندیل اس سے پہلے پانی کے وزیر رہے ہیں۔

اسی بارے میں