عراق: کار بم حملوں میں بتیس افراد ہلاک

آخری وقت اشاعت:  پير 1 اکتوبر 2012 ,‭ 21:29 GMT 02:29 PST
عراق دھماکہ (فائل فوٹو)

عراق میں امریکی فوج کے جانے کے بعد دھماکوں میں اضافہ ہوا ہے۔

عراقی پولیس کا کہنا ہے کہ ملک کے مختلف علاقوں میں متعدد کار بم دھماکوں میں کم از کم بتیس افراد ہلاک اور سو سے زائد زخمی ہوئے ہیں۔

حکام کے مطابق ان دھماکوں میں شیعہ زائرین اور سکیورٹی اہلکاروں کو نشانہ بنایا گیا۔

پولیس کا کہنا ہے کہ دارالحکومت بغداد کے شمال میں واقع تاجی شہر میں یکے بعد دیگرے چار کار بم پھٹے جن میں کم سے کم آٹھ افراد ہلاک اور بائیس دیگر زخمی ہوئے۔

مدائن کے علاقے ایک کار بم حملے میں تین افراد ہلاک ہو گئے۔ یہ دھماکہ اس وقت ہوا جب شعیہ زائرین کو لے جانے والی بس ادھر سے گزر رہی تھی۔ ہلاک ہونے والے تینوں افراد عراقی ہیں جبکہ کئی ایرانی زخمی بھی ہوئے ہیں۔

اس کے علاوہ کت اور دیگر کئی شہروں میں بھی اتوار کو کار بم حملے ہوئے۔

حالانکہ دو ہزار چھ اور سات کے بعد ملک میں تشدد کے واقعات میں کمی واقع ہوئی ہے لیکن گذشتہ سال امریکی فوجیوں کی واپسی کے بعد ان میں اضافہ ديکھنے میں آیا ہے۔

خبروں میں کہا جا رہا ہے کہ تاجی میں ہونے والا دھماکہ شیعہ فرقہ سے تعلق رکھنے والوں کی رہائش کے قریب کھڑی کار میں ہوا۔ حالانکہ تاجی شہر میں سنی مسلمانوں کی اکثریت ہے اور یہ بغداد سے بارہ میل شمال میں واقع ہے۔

لیکن چند ذرائع یہ بھی کہہ رہے ہیں کہ یہ دھماکہ پولیس چک پوسٹوں کو نشانہ بنانے کے لیے کیا گیا تھا۔

پولیس نے خبر رساں ایجنسی اے پی سے بات کرتے ہوئے کہا کہ ایک علیحدہ بم دھماکے میں ایک شخص ہلاک ہو گیا ہے۔ یہ دھماکہ بغداد کے شمال مغرب میں ہوا جہاں شیعہ آبادی ہے۔

حالیہ دنوں میں عراق میں کئی خطرناک بم حملے ہوئے ہیں۔

سترہ ستمبر دو ہزار بارہ میں ایک خودکش کار دھماکے میں سات افراد ہلاک ہو گئے تھے اور یہ حملہ بغداد کے سخت سیکورٹی والے علاقے میں ہوا تھا۔

اس سے ایک ہفتہ قبل ملک بھر میں ہونے والے کئی حملوں میں درجنوں افراد ہلاک ہو گئے تھے۔

امریکی فوج کی واپسی کے بعد ہونے والے خطرناک ترین بم دھماکوں میں اسی سال تیرہ جون کو ہونے والے متعد دھماکوں میں چوراسی افراد ہلاک ہو گئے تھے اور تین سو کے قریب افراد زخمی بھی ہوئے تھے۔

اسی بارے میں

متعلقہ عنوانات

BBC © 2014 بی بی سی دیگر سائٹوں پر شائع شدہ مواد کی ذمہ دار نہیں ہے

اس صفحہ کو بہتیرن طور پر دیکھنے کے لیے ایک نئے، اپ ٹو ڈیٹ براؤزر کا استعمال کیجیے جس میں سی ایس ایس یعنی سٹائل شیٹس کی سہولت موجود ہو۔ ویسے تو آپ اس صحفہ کو اپنے پرانے براؤزر میں بھی دیکھ سکتے ہیں مگر آپ گرافِکس کا پورا لطف نہیں اٹھا پائیں گے۔ اگر ممکن ہو تو، برائے مہربانی اپنے براؤزر کو اپ گریڈ کرنے یا سی ایس ایس استعمال کرنے کے بارے میں غور کریں۔