’خوشی میں پاکستان سولہویں نمبر پر‘

آخری وقت اشاعت:  جمعرات 4 اکتوبر 2012 ,‭ 11:11 GMT 16:11 PST

پاکستان میں لوگوں کو جو ذرائع حاصل ہیں ان سے وہ خوش ہیں

نیو اکنامکس فاؤنڈیشن نے ایک رپورٹ میں دنیا کے ایک سو اکاون خوش ممالک کی جو فہرست شائع کی ہے اس میں پاکستان سولہویں نمبر جبکہ بھارت بتیسویں اور امریکہ ایک سو پانچویں نمبر پر ہے۔

اس فہرست میں اسرائیل پندرویں نمبر پر ہے جس کا مطلب یہ کہ خوشی کے اعتبار سے پاکستان اسرائیل سے صرف ایک نمبر پیچھے ہے۔

رپورٹ کے مطابق کوسٹا ریکا دنیا کا سب سے خوش ترین ملک ہے جبکہ ویتنام اور کولمبیا دوسرے اور تیسرے نمبر پر ہیں۔

نیو اکانومکس فاؤنڈیشن کے ’ہیپی پلینٹ انڈیکس‘ نامی پروجیکٹ میں دنیا کے ایک سو اکاون ممالک میں خوشی کا اندازہ لگایا گیا ہے۔

اس رپورٹ کو تیار کرنے کے لیے مختلف ذرائع سے ڈیٹا اکٹھا کیا گیا جن میں یو این ڈی پی اور گیلپ ڈیٹا سے حاصل کی گئی معلومات شامل ہیں۔

رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ پاکستان میں اوسط عمر اور ملک کی خوشحالی اوسط درجے کی ہے لیکن ’اکالوجیکل فٹ پرنٹ‘ یعنی لوگوں کو زندگی بسر کرنے کے لیے جو ذرائع حاصل ہیں ان کا وہ بہتر استعمال کر رہے ہیں جو ان کی خوشی کا سبب بھی ہے۔

اس فہرست میں بنگلہ دیش گیارہویں نمبر پر ہے۔ امریکہ کا اس فہرست میں اتنے کم مقام پر آنے کا مطلب عوام کو حاصل ذرائع کا صیحیح استعمال اور ناخوش ہونا ہے۔

اس فہرست میں افغانستان ایک سو نویں نمبر پر ہے۔

’ہیپی انڈیکس‘ کی اس فہرست میں سب سہارا افریقی ممالک سب سے نیچے ہیں۔

اسی بارے میں

متعلقہ عنوانات

BBC © 2014 بی بی سی دیگر سائٹوں پر شائع شدہ مواد کی ذمہ دار نہیں ہے

اس صفحہ کو بہتیرن طور پر دیکھنے کے لیے ایک نئے، اپ ٹو ڈیٹ براؤزر کا استعمال کیجیے جس میں سی ایس ایس یعنی سٹائل شیٹس کی سہولت موجود ہو۔ ویسے تو آپ اس صحفہ کو اپنے پرانے براؤزر میں بھی دیکھ سکتے ہیں مگر آپ گرافِکس کا پورا لطف نہیں اٹھا پائیں گے۔ اگر ممکن ہو تو، برائے مہربانی اپنے براؤزر کو اپ گریڈ کرنے یا سی ایس ایس استعمال کرنے کے بارے میں غور کریں۔